سعودی عرب شام سے غیرملکی فوج کے انخلا کا حامی، نئے قراردار کا منتظر
The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب شام سے غیرملکی افواج کے انخلا کا حامی

ریاض: سعودی عرب کے وزیر برائے خارجہ عادل الجبیر کا کہنا ہے کہ ہم ایسے قرار داد کے منتظر ہے جس کے ذریعے شام سے غیر ملکی فوجیوں کا انخلا یقینی بنایا جاسکے۔

تفصیلات کے مطابق اپنے بیان میں عادل الجبیر کا کہنا تھا کہ شام کا مسئلہ اقوام متحدہ کے قرار داد 2254 کے تحت حل کرنے کے حوالے سے عرب ممالک سے گفتگو کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب چاہتا ہے کہ شام سے بیرونی مداخلت کا خاتمہ ہوا، دہشت گردی کا مسئلہ بھی انتہائی سنگین ہے، خطے میں امن کے خواہاں ہیں۔

وزیر برائے خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ شامی مسئلے کے حل کے لیے سیاسی راستہ اپنانا ہوگا، اسے کے ذریعے شام کی خودمختاری، سالمیت اور آزادی ممکن ہے۔

شام، افغانستان سے فوجی انخلا کا معاملہ، ٹرمپ کو مخالفت کا سامنا

خیال رہے کہ امریکا نے دسمبر میں شام سے اپنی افواج کے انخلاء کا اعلان کیا تھا تاہم اب تک عملی اقدامات نہیں کیے گئے، اس اعلان کے بعد ترکی نے اپنی سرحد کے ساتھ بیس میل کے فاصلے تک ایسے محفوظ علاقے قائم کرنے کا ارادہ ظاہر کیا تھا جس پر اب عملی اقدامات ہونے ہیں۔

دوسری جانب ترک صدر رجب طیب اردوگان نے یہ فیصلہ کررکھا ہے کہ شام کے جنوب مغربی علاقوں پر محفوظ علاقے بنائے جائیں گے تاکہ ترکی میں موجود چار ملین مہاجرین شام واپس جاسکیں۔

شامی فورسز نے گذشتہ ہفتے شام کے جنوب مغربی حصوں پر عسکریت پسنوں کے ٹھکانوں پر فضائی بمباری کی تھی جس کے باعث متعدد ہلاکتیں ہوئیں تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں