The news is by your side.

Advertisement

صحافی کی گمشدگی: دھمکیوں اور منفی اقدامات کا بھرپور جواب دیں گے، سعودی عرب

ریاض: سعودی عرب نے کہا ہے کہ صحافی جمال خاشقجی کی گمشدگی کی وجہ سے دی جانے والی دھمکیوں اور منفی اقدامات کا بھرپور جواب دیا جائے گا۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی حکام کا کہنا ہے کہ صحافی جمال خاشقجی کی گمشدگی کے معاملے پر سعودی عرب کے خلاف کسی بھی کارروائی کے جواب میں اس سے بڑا ردعمل سامنے آئے گا۔

سعودی حکام نے ریاست پر صحافی کے اغوا اور قتل کے الزامات بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ جلد حقائق منظر عام پر آجائیں گے، جمال خاشقجی کے لاپتا اور قتل کی افواہیں سعودی عرب کے خلاف سازش ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ اگر یہ ثابت ہوگیا کہ لاپتا سعودی صحافی جمال خاشقجی استنبول میں سعودی قونصل خانے میں ہلاک کیے گیے ہیں تو ریاض حکومت کو سخت سزا دی جائے گی۔

مزید پڑھیں: صحافی کی گمشدگی، ٹرمپ کی سعودی عرب کو نتائج بھگتنے کی دھمکی

دوسری جانب جمال خاشقجی کی گمشدگی کے بعد بین الاقوامی برادری کے ساتھ کشیدہ ہوتے تعلقات کے باعث سعودی عرب کی اسٹاک مارکیٹ میں شدید مندی کا رجحان رہا، تقریباً دو گھنٹے کی تجارت کے انڈیکس سات فیصد تک گر گیا جو دسمبر 2014 کے بعد سب سے بڑی گراوٹ ہے جب تیل کی قیمتیں گر رہی تھیں۔

واضح رہے کہ امریکا اور برطانیہ نے سعودی صحافی کی گمشدگی معاملے پر سعودی عرب کے ملوث ہونے کے شبے میں سعودی عرب میں منعقد ہونے والی عالمی کانفرنس کے بائیکاٹ پر غور شروع کردیا ہے۔

یاد رہے کہ جمال خاشقجی امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے کالم نویس ہیں اور وہ دو اکتوبر کو استنبول میں سعودی قونصلیٹ میں جانے کے بعد سے لاپتا ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں