The news is by your side.

Advertisement

بیرون مملکت سے آنے والے عمرہ زائرین کے لیے نئے قواعد

سعودی عرب وزارت حج و عمرہ نے بیرون مملکت سے آنے والے عمرہ زائرین کی عمر کی حد کا تعین کردیا ہے۔

عربی روزنامہ ’عکاظ‘ کے مطابق وزارت حج و عمرہ نے کہا ہے کہ بیرون مملکت سے صرف 18 تا 50 برس عمر تک کے زائرین ہی کو عمرہ اور مسجد الحرام میں نماز کی ادائیگی کے پرمٹ جاری ہوں گے-

وزارت حج و عمرہ نے کہا کہ وہ زائرین جو بیرون مملکت سے عمرہ ویزہ حاصل کرنا چاہتے ہوں وہ اپنے ملک میں لائسنس یافتہ ٹریولنگ ایجنسی سے رابطہ کریں جو لازمی طور پر کسی سعودی عمرہ کمپنی کے ساتھ منسلک ہو۔

سعودی وزارت حج و عمرہ نے تاکید کی کہ عمرہ زائرین سفر سے قبل سعودی عرب میں منظور شدہ کرونا ویکسین کی مطلوبہ خوراکیں حاصل کرلیں اور سعودی وزارت خارجہ کے پلیٹ فارم سے آن لائن عمرہ ویزہ کے اجرا کے لیے ویکسین سرٹیفکیٹ پیش کریں۔

یاد رہے کہ وزارت حج و عمرہ نے حال ہی میں بیرون مملکت سے آنے والے زائرین کے لیے عمرہ اور نماز کے اجازت ناموں کے حوالے سے اعتمرنا اور توکلنا ایپس کی سہولت کا اعلان کیا تھا۔

سعودی وزارت حج و عمرہ کے مطابق باہر سے آنے والے زائرین قدوم پلیٹ فارم پر اندراج اور سعودی عرب پہنچنے کے بعد عمرہ، زیارت نیز مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں نماز کے اجازت نامے جاری کراسکتے ہیں۔

واضح رہے اندرون ملک سے عمرہ زائرین کی بابت وزارت حج و عمرہ نے تاکید کی ہے کہ کوئی بھی سعودی شہری یا مقیم غیرملکی پرمٹ کے بغیر نہ تو عمرہ کرسکتا ہے اور نہ ہی مسجد الحرام میں نماز کے لیے جاسکتا ہے، حرم شریف میں بچوں کو بھی لے جانے کی اجازت نہیں ہے۔

بچوں کو حرم شریف کے صحنوں میں بھی نماز کے لیے نہیں لے جایا جاسکتا البتہ 12 برس اور اس سے زیادہ عمر کے افراد ویکسین کی دونوں خوراکیں لینے کے بعد عمرہ اجازت نامے حاصل کرسکتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں