The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کا ایک لاکھ الیکٹرک گاڑیاں خریدنے کا معاہدہ

ریاض: سعودی عرب نے امریکی کمپنی کے ساتھ ایک لاکھ الیکٹرک گاڑیاں خریدنے کا معاہدہ کرلیا۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب نے امریکا کی لوسیڈ موٹرز کمپنی کے ساتھ آئندہ دس سال میں 50 ہزار سے ایک لاکھ تک الیکٹرک گاڑیاں خریدنے کے معاہدے پر دستخط کیے ہیں تاکہ سڑکوں پر ماحول دوست گاڑیوں میں اضافہ کیا جاسکے۔

وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ کہ یہ معاہدہ سعودی وژن 2030 کے کلیدی مقاصد کی حمایت میں ایک اہم اقدام ہے۔

حکام کے مطابق اس اقدام کا مقصد سعودی عرب کے باشندوں کی معیشت، معاشرے اور زندگیوں میں صحت مند تبدیلی، مستقبل کے لیے موزوں نئے شعبوں کی تعمیر اور آئندہ نسلوں کے لیے ملازمتیں پیدا کرنا شامل ہے۔

سعودی وزارت خزانہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ منصوبہ سعودی گرین انیشی ایٹو اور مڈل ایسٹ گرین انیشیٹو کے ساتھ بھی مطابقت رکھتا ہے۔

سعودی خود مختار دولت فنڈ جسے پبلک انوسٹمنٹ فنڈ( پی آئی ایف) کے نام سے بھی جانا جاتا ہے لوسیڈ میں معتبر حصص کا مالک ہے جسے وزارت خزانہ نے منتخب کیا ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب الیکٹرک گاڑیوں کو مملکت میں تیار کرنے کے لیے لوسیڈ کے ساتھ مل کر یہاں پہلا الیکٹرک وہیکل مینوفیکچرنگ پلانٹ لگا نے کا ارادہ رکھتا ہے جس کا مقصد 2030 تک دارالحکومت ریاض میں چلنے والی 30 فیصد گاڑیوں کو تیل کی بجائے بیٹری پر منتقل کرنے کو یقینی بنانا ہے۔

وزارت خزانہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ الیکٹرک گاڑیوں کی مینوفیکچرنگ کے اس پلانٹ سے حکومت کی لوکل مینوفیکچرنگ کی مہم کو سپورٹ ملے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں