The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب اورامارات رمضان میں 200 ملین یمنینوں کو امداد فراہم کریں گے

ریاض : سعودی عرب اور یواے ای  رمضان المبارک میں دوسوملین یمنینوں کو امداد فراہم کریں گے، دونوں ملکوں کا بین الاقوامی امدادی تنظیموں کے ساتھ رابطہ کر کے اس امداد کی تقسیم کو یقینی بنانے کا عمل شروع کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب کی حکومتوں نے اعلان کیا ہے کہ ماہِ صیام کے لیے جنگ زدہ ملک یمن کو دو سو ملین امریکی ڈالر کی خصوصی امداد فراہم کی جائے گی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کا کہنا ہے خلیجی ریاست یو اے ای کے وزیر مملکت برائے بین الاقوامی تعاون ریم بنت ابراہیم الہاشمی نے بتایاکہ یہ امداد رمضان کے مہینے ہی میں تقسیم کی جائے گی، دونوں ملکوں نے بین الاقوامی امدادی تنظیموں کے ساتھ رابطہ کر کے اس امداد کی تقسیم کو یقینی بنانے کا عمل شروع کر دیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ 140ملین ڈالر   کی رقم مجموعی امدادی کے لئے مختص کی جائے گی اور  یہ امداد حوثی ملیشیا اور منصور ہادی کے کنٹرول والے علاقوں میں یکساں طور پر تقسیم کی جائے گی،  امداد پارٹنر امدادی اداروں بشمول اقوام متحدہ کے ورلڈ فوڈ پروگرام کے ذریعے تقسیم کی جائے گی۔

مزید پڑھیں : یو اے ای اور سعودی عرب کا یمن کے لیے 500 ملین ڈالر امداد کا اعلان

ریم بنت ابراہیم الہاشمی نے کہا کہ امداد ان لوگوں کو ملنی چاہیئے جن کو اس کی سب سے زیادہ ضرورت ہوتی ہے،  ہمیں حوثیوں کے زیرکنٹرول علاقوں تک رسائی نہیں ہے اس لئے ہمیں بین الاقوامی اور اقوام متحدہ کے اداروں کی مدد لینی پڑ رہی ہے۔

وزیر مملکت کا کہنا تھا یہ رقم ان بچوں، حاملہ اور نرسنگ خواتین پر بھی خرچ کی جائے گی جو غذائی قلت کا شکار ہیں،  آج یمن میں تقریبا 2.1 ملین بچے ایسے ہیں جو شدید غذائی قلت کا شکار ہیں۔

خیال رہے کہ گذشتہ سال نومبر میں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے یمن کو درپیش بحران سے نکالنے کے لیے ایک اہم قدم اُٹھاتے ہوئے قحط اور افلاس کے شکار عوام کے لیے 500 ملین ڈالر کی اضافی امداد فراہم کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں