The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: ذخیرہ اندوزی اور اشیا مہنگی فروخت کرنے والوں کو سخت وارننگ

ریاض: سعودی عرب میں کرونا وائرس کی صورتحال کے پیش نظر اشیاء خورد و نوش کی ذخیرہ اندوزی  اور اشیا مہنگی فروخت کرنے والوں کو سخت وارننگ جاری کردی گئی۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی پبلک پراسیکیوشن نے تجارتی، زرعی و صنعتی اداروں اور مختلف خدمات پیش کرنے والی کمپنیوں کو خبردار کیا ہے کہ ہنگامی حالات، عالمی واقعات اور عارضی مسائل سے ناجائز فائدہ اٹھانے کی کوشش نہ کی جائے۔

پراسیکیوشن کی جانب سے کہا گیا ہے کہ کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے احتیاطی اقدامات کے باعث سامان مہنگا کرنے یا صارفین کو بے وقوف بنانے کی کوشش کی گئی توسخت اقدامات کیے جائیں گے۔

وارننگ میں کہا گیا ہے کہ کوئی بھی ادارہ نئی صورتحال سے ناجائز فائدہ اٹھا کر مارکیٹ کو کنٹرول کرنے یا جزوی یا مکمل طور پر اجارہ داری کی کوشش کرے گا تو اس پر جرمانہ ہوگا۔

پبلک پراسیکیوشن کا کہنا تھا کہ کسی بھی ادارے کو اس بات کی اجازت نہیں کہ وہ دوسرے اداروں کو مارکیٹ سے نکالنے کے لیے اپنا سامان یا سروس مجموعی لاگت سے کم پر فروخت کرے یا کسی ادارے کو بھاری نقصان پہنچانے کی کارروائی کرے یا نئے اداروں کو مارکیٹ میں قدم رکھنے سے روکے۔

ایسی حرکتیں کرنے والوں پر 10 فیصد تک جرمانہ ہوگا، جرمانے کی انتہائی حد 1 کروڑ ریال تک مقرر کردی گئی۔

دوسری جانب وزارت تجارت نے بھی ٹویٹر پر انتباہ کیا کہ سعودی عرب میں تمام تجارتی مراکز کی کڑی نگرانی کی جا رہی ہے۔ بنیادی ضروری اشیا کے نرخ بڑھانے، کرونا وائرس سے بچاؤ کے لوازمات مہنگے کرنے، ذخیرہ کرنے اور نہ بیچنے والے اداروں کے خلاف سخت کارروائی کرے گی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں