سعودی عرب میں غیرملکیوں پر فیس لگے گی یا نہیں؟ جلد فیصلہ متوقع
The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں غیرملکیوں پر فیس لگے گی یا نہیں؟ جلد فیصلہ متوقع

ریاض: سعودی عرب میں غیرملکی ملازمین سے فیس وصول کی جارہی ہے تاہم اب غیرملکی ملکیوں سے فیس وصول کرنے کے فیصلے پر نظرثانی کی جارہی ہے۔

امریکی خبررساں ادارے بلومببرگ کے مطابق سعودی عرب کے متعلقہ نجی اداروں کے غیرملکی ملازمین پر مقرر فیس کے حوالے سے نظرثانی کررہے ہیں۔

غیرملکی کارکنان پر فیس پر کوئی نظرثانی نہیں ہورہی ہے

ڈاکٹر عواد االعواد وزیر اطلاعات

بلومبرگ کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب کے 4 مختلف ذرائع سے رپورٹس ملی ہے کہ فیس کی مکمل منسوخی کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، وزارتی کمیٹی غیرملکیوں پر فیس کے ڈھانچے پر نظرثانی یا ترمیم کا جائزہ لے رہی ہے۔

آئندہ چند ہفتے یا آئندہ سال کے آغاز پر اس پر کوئی نہ کوئی فیصلہ ہوجائے گا، بلومبرگ ذرائع کا یہ بھی کہنا تھا کہ غیرملکیوں پر فیس کا مقصد ریاست کی مالیاتی ضرورتوں اور نجی اداروں کے یہاں روزگار اور شرح نمو کی استعداد کے درمیان توازن پیدا کرنا ہے۔

رپورٹس کے مطابق ابھی تک کسی بھی غیرملکیوں کی فیس کے بارے میں کوئی اہم کام نہیں کیا۔

مزید پڑھیں: سعودی عرب: غیر ملکی باشندوں پر ٹیکس لگانا بہت نقصان دہ ہوگا، ماہرین

دوسری جانب سعودی بین الاقوامی رابطہ مرکز نے ای میل کے ذریعے بتایا ہے کہ وزیر اطلاعات و نشریات ڈاکٹر عواد العواد نے کہا ہے کہ غیرملکی کارکنان پر فیس پر کوئی نظرثانی نہیں ہورہی ہے۔

تاہم بلومبرگ کی رپورٹ کے مطابق آئندہ چند ہفتوں میں یہ واضح ہوجائے گا کہ غیرملکی ملازمین پر کتنی فیس لاگو ہوگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں