site
stats
عالمی خبریں

غیر اخلاقی ویڈیو چیٹ پر سعودی نوجوان گرفتار

ریاض: سعودی عرب کے دارالحکومت میں مقیم ابوسن نامی بچے کو امریکی خاتون بلاگر کرسٹینا کروکیٹ کے ساتھ غیر اخلاقی آن لائن ویڈیو چیٹ کے الزام میں پولیس نے گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق کچھ ماہ قبل سوشل میڈیا پر ایک آن لائن ویڈیو چیٹ منظر عام پر آئی جس میں 19 سالہ ابو سن نامی لڑکے کو امریکی بلاگر کے ساتھ گفتگو کرتے دکھایا گیا تھا، جس میں 21 سالہ امریکی خاتون اور سعودی نوجوان ایک دوسرے سے محبت کا اظہار کررہے تھے۔

سعودی لڑکے کی مزاحیہ ویڈیو چیٹ کے بعد صارفین کی بہت بڑی تعداد نے اُس سے گفتگو کی خواہش ظاہر کی، ابو سن کی مزاحیہ باتیں عرب دنیا کے عوام کو متاثر کرنے میں کامیاب رہیں۔ لائیو براڈکاسٹنگ کی ویب سائٹ پر ویڈیو چیٹ کرتے ہوئے صارفین کی بہت بڑی تعداد اس بات چیت کو سننے کے لیے جمع ہوجاتی تھی اور اس سے خوب لطف اندوز ہوتے تھے۔

سعودی نوجوان کو روزانہ کی بنیاد پر امریکی لڑکیوں سےٹوٹی پھوٹی انگریزی میں بات کرتے ہوئے دیکھ کر سماجی رابطے کی ویب سائٹ استعمال کرنے والے صارفین بہت محظوظ ہوتے نظر آتے تھے تاہم اس کے مداحوں میں دن بہ دن اضافہ بھی دیکھنے میں آرہا تھا۔

saudi-1

ریاض کی مقامی پولیس نے سعودی نوجوان کی گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’ابو سن کی ویڈیوز نوجوانوں کے ذہن میں غلط اور منفی رجحانات پیدا کرنے کا سبب بن رہیں تھیں جس کی کئی افراد نے شکایات بھی درج کروائیں‘‘۔

پولیس نے ابو سن کی گرفتاری کے حوالے سے مزید بتایا کہ ’’نوجوان کو اُس وقت گرفتار کیاگیا تھا جب وہ کویتی نوجوان کے ساتھ ویڈیو چیٹ میں مصروف تھا، ملزم کی گرفتار ی کے وقت اُس کے دو دوست اُس کے ہمراہ موجود تھے تاہم انہیں ابتدائی تفتیش کے بعد چھوڑ دیا گیا ہے‘‘۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top