The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب اور اماراتی ایئرلائنز کے درمیان اہم معاہدہ طے پاگیا

ریاض: سعودی ٹور ازم اتھارٹی اور امارات ایئرلائنز کے درمیان اہم معاہدہ طے پاگیا۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق سعودی ٹورازم اتھارٹی اور امارات ائیرلائنز کے درمیان حال ہی میں ایک معاہدے پر دستخط کیے گئے جس کا مقصد مملکت کو چھٹیوں کے انتخاب کے لیے بین الاقوامی مسافروں کی تعداد میں اضافہ کرنا اور دونوں کی معیشت کو فائدہ پہنچانا ہے۔

اس معاہدے سے سعودی سیاحت کے بنیادی ڈھانچے کے منصوبوں کو مزید تقویت ملے گی جس میں نیوم اور العلا کی ثقافتی سیاحت اور ریاض اور القدعیہ کے تفریحی دوروں میں اضافہ ممکن بنایا جائے گا۔

خلیج، مشرق وسطیٰ اور وسطی ایشیا میں تجارتی آپریشنز کے لیے امارات ائیرلائنز کے سینئر نائب صدر عادل الغیث نےسعودی عرب کو خطے میں سب سے اہم حیثیت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ معاہدہ مملکت کو سیاحت کے فروغ کا مقصد حاصل کرنے میں مدد کرے گا۔

عادل الغیث نے بتایا کہ سعودی عرب اپنے منفرد ترقیاتی منصوبوں کے ساتھ ایک بڑی تبدیلی سے گزر رہا ہے جس کے بعد اسے دنیا کے سب سے پرکشش سیاحتی مقامات میں سے ایک کے طور پر پوزیشن حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔

انہوں نے کہا کہ ہم پہلے ہی ایسے مسافروں کی دلچسپی دیکھ رہے ہیں جو مملکت کے شاندار مناظر، خوبصورت سمندر اور بھرپور ثقافتی سیاحت کے ساتھ یہاں کی تاریخ جاننے کے خواہشمند ہیں۔

سعودی ٹورازم اتھارٹی اور امارات ائیرلائنز کے درمیان کئے جانے والے معاہدے سے دنیا بھر کے تقریبا 130 روٹس سے سیاحوں کو سعودی عرب کے اہم مقامات اور ثقافت دیکھنے میں مدد ملے گی۔

عادل الغیث نے بتایا ہے کہ ہماری ایئرلائن پہلے ہی اپنے چار سعودی گیٹ ویز جدہ ، ریاض، دمام اور مدینہ منورہ کے لیے ہر ہفتے 53 پروازیں چلاتی ہے۔

معاہدے پر دستخط کرنے کے بعد سعودی ٹورازم اتھارٹی کے چیف ایگزیکٹو افسر اور بورڈ ممبر فہد حمیدالدین نے کہا ہے کہ یہ یادداشت ہمیں دنیا بھر کے120 سے زیادہ مقامات تک پہنچنے اور ان مقامات سے سیاحوں کو مختلف سعودی مقامات کی طرف راغب کرنے کے قابل بنائے گی۔

اس موقع پر سعودی عرب میں سیاحت کے ماہر عمر اکبر نے کہا ہے کہ یہ معاہدہ سعودی سیاحت کے ماحولیاتی نظام کے مقاصد اور خواہشات کے حصول کے لیے راہ ہموار کرے گا جو سعودی وژن2030 سے ہم آہنگ ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں