The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: شناختی کارڈ میں حجاب کے بغیر خواتین کی تصویر سے متعلق اہم خبر

ریاض: سعودی حکام نے شناختی کارڈ پر خواتین کے حجاب کے بغیر تصویر لگانے کی پابندی کی تردید کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سعودی محکمہ شہری امور نے کہا ہے کہ نئے سعودی شناختی کارڈ میں خواتین کو حجاب کے بغیر تصویر لگانے کا پابند بنانے کی کوئی حقیقت نہیں ہے۔

محکمہ شہری امور کے ترجمان محمد الجاسر نے واضح کیا کہ اس حوالے سے جو کچھ کہا جا رہا ہے وہ بے بنیاد ہے، عوام الناس کو چاہیے کہ خبریں مصدقہ ذرائع سے حاصل کریں۔

دراصل شناختی کارڈ کے حوالے سے محکمہ شہری احوال نے ایک پرانی شق حذف کر دی ہے، جس میں یہ لکھا گیا تھا کہ شناختی کارڈ کے اجرا کے لیے خواتین پر لازم ہے کہ وہ بال اور گلے کو ڈھانپے رکھیں، یہ شق ہٹانے کی وجہ سے یہ غلط فہمی پیدا ہوئی کہ حکومت نے خواتین کو بغیر حجاب تصویر لگانے کا پابند بنا دیا ہے۔

محکمے کے ترجمان نے کہا یہ شق اب حذف کردی گئی ہے جس کا مطلب ہے کہ خواتین کے لیے لازم نہیں رہا کہ وہ تصویر بنواتے وقت اپنے بال اور گلے پر دوپٹہ اوڑھے رکھیں۔

انھوں نے کہا شناختی کارڈ کے لیے تصویر کے جو معیار مقرر کیے گئے ہیں ان کے نمونے جاری کر دیے گئے ہیں، جن سے جانا جا سکتا ہے کہ کون سی تصویریں قابل قبول ہیں اور کون سی نہیں، جب کہ 10 سے 14 سال کی عمر کے بچوں کے لیے شماغ اور عقال کی شرط ختم کر دی گئی ہے۔

محکمے نے بعض مریضوں اور معذوروں کے لیے یہ سہولت بھی مہیا کر دی ہے کہ محکمے کا فوٹوگرافر خود ان کے پاس جا کر معیار کے مطابق تصویر بنائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں