The news is by your side.

Advertisement

پی ٹی آئی کی نئی حلقہ بندیوں پر الیکشن کمیشن کو نوٹس جاری کرنے کی استدعا مسترد

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے نئی حلقہ بندیوں سے متعلق پی ٹی آئی کی درخواست پر الیکشن کمیشن کونوٹس جاری کرنے کی استدعا مسترد کردی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں پی ٹی آئی کی نئی حلقہ بندیوں سے متعلق درخواست پر سماعت ہوئی ، جسٹس اعجاز الاحسن کی سربراہی میں 2رکنی بینچ نے سماعت کی۔

جسٹس منیب اختر نے استفسار کیا حلقہ بندیوں کے خلاف درخواست میں کوئی ترمیم کی گئی ، کیاترمیمی درخواست میں گراونڈزاور استدعا میں تبدیلی کی گئی۔

وکیل فیصل چوہدری نے بتایا کہ ترمیمی درخواست میں صرف فریقین کوتبدیل کیا گیا ، الیکشن کمیشن کو نوٹس کر دیں ، الیکشن کمیشن آرٹیکل 51 کے تحت نئی حلقہ بندیاں شروع کر چکا ہے۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے استفسار کیا حلقہ بندیوں کےعمل کا آغاز ہونے سے کیا فرق پڑتا ہے، پہلے درخواست کو نمبر تو لگ لینے دیں۔

عدالت نے وکیل پی ٹی آئی کی الیکشن کمیشن کو نوٹس جاری کرنے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے وکلا کو درخواست میں ترمیم کرنے کی اجازت دے دی۔

سپریم کورٹ نے رجسٹرار کوترمیم شدہ درخواست درج رجسٹر کرنے کا حکم دیتے ہوئے پی ٹی آئی کو الیکشن پلان بھی درخواست کے ساتھ منسلک کرنے کی ہدایت کردی۔

عدالت نے کہا ابھی ترمیم شدہ درخواست نہیں آئی ،رجسٹر نہیں ،نوٹس کیسے کر سکتے ہیں، بعد ازاں نئی حلقہ بندیوں کے خلاف پی ٹی آئی کی پٹیشن پر سماعت جون کے پہلے ہفتے تک ملتوی کردی۔

یاد رہے پی ٹی آئی نے نئی حلقہ بندیوں کے خلاف درخواست دائرکی تھی ، جس پر رجسٹرار سپریم کورٹ نے درخواست پر اعتراضات عائد کیے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں