The news is by your side.

Advertisement

بدین کے گاؤں میں اسکول جانا موت کا کھیل بن گیا، 6 بچے جاں بحق

بدین: صوبہ سندھ کے ضلع بدین میں ایک گاؤں میں بچوں کا اسکول جانا بھی موت کا کھیل بن گیا ہے، اب تک 6 بچے جاں بحق ہو چکے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق بدین کے گاؤں سونو خان سیال میں بچوں کا اصل امتحان اسکول جانا بن گیا ہے، نہر کے پار واقع اسکول تک پہنچنے کے لیے بچوں کو ایک پتلے تنے پر رسّی پکڑ کر گزرنا پڑتا ہے، اس عمل کے دوران نہر عبور کرتے ہوئے اب تک چھ بچے جان سے ہاتھ دھو چکے ہیں۔

نہر سے گزر کر جنازہ لے جایا جا رہا ہے

قابل افسوس امر ہے کہ بدین کے گاؤں میں نہر پار پہنچنے کے لیے اسکول کے بچوں کو سرکس کی طرح باریک لکڑی پر چلنا پڑتا ہے، جب کہ مقامی انتظامیہ مجرمانہ غفلت میں مدہوش پڑی ہوئی ہے۔ اس نہر کو علی واہ کہا جاتا ہے، اس گاؤں کے آس پاس دو کلومیٹر کے علاقے میں نہر کی دوسری جانب جانے کے لیے کوئی پل نہیں بنایا گیا ہے۔

گاؤں سونو خان سیال میں بچوں کا اسکول جانا پُل صراط پر سے گزرنے جیسا عمل ہے، کیوں کہ اس سے نہر میں گرنے والے چھ بچے جان گنوا چکے ہیں، معلوم ہوا ہے کہ گاؤں سے باہر جانے کا کوئی دوسرا راستہ ہی نہیں بنایا گیا، نہ ہی نہر پر باقاعدہ پُل تعمیر کیا گیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کی خصوصی رپورٹ کے مطابق گاؤں کے جنازے بھی اسی پُر خطر راستے سے گزرتے ہیں، مکینوں کا کہنا ہے کہ عوامی نمایندے ووٹ لینے کے بعد مُڑ کر نہیں دیکھتے۔ مکینوں نے مطالبہ کیا ہے کہ نہر پر پُل بنا کر دیا جائے تاکہ پریشانی اور حادثات سے بچا جا سکے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں