The news is by your side.

Advertisement

دنیا کا سب سے خطرناک اور انتہائی منافع بخش کاروبار

قاہرہ : مصری انجینیئر اور فارماسسٹ صحرا میں بچھوؤں کے زہر کی تلاش کا کام کر رہے ہیں جس سے انہیں خاطر خواہ آمدنی بھی ہورہی ہے، بچھو کا ایک گرام زہر سات ہزار ڈالر سے زائد میں فروخت ہوتا ہے۔

مصری ذرائع ابلاغ نے مصر میں بچھوؤں کے حوالے سے انجینئر ابو سعود اور فارماسسٹ نھلۃ عبدالحمید سے گفتگو کی جس میں انہوں نے عجیب و غریب حقائق کا انکشاف کیا۔

ابو سعود نامی انجینیئر کا کہنا تھا کہ وہ بچھو کو کلپ سے پکڑکر اس کو بجلی کا کرنٹ لگاتے ہیں تو یہی وہ لمحہ ہوتا ہے جب بچھو کا زہر قطرے کی شکل میں ٹپکتا ہے پھر اسے ایک چھوٹی سی بوتل میں محفوظ کر لیا جاتا ہے۔

مصر کے الوادی مقام کے باشندے ابو السعود نے بتایا کہ یہاں کوئی گھر ایسا نہیں جس کا کوئی مکین بچھوؤں کے ڈنک سے محفوظ رہا ہو، گھروں اور کھیتوں میں کام کرنے والے بڑے چھوٹے سب بچھو زدہ افراد ہیں۔

ابو السعود نے کہا کہ جب میرے علم میں یہ بات آئی کہ بچھو کا زہر دنیا کا مہنگا ترین زہر ہے فوری طور پر میرے ذہن میں یہ خیال آیا کہ کیوں نہ ہم اپنے اس ریگستان سے فائدہ اٹھائیں اور بچھو جو ہمارے لیے آفت بنے ہوئے ہیں انہیں اپنی کمائی کا ذریعہ بنائیں۔

فارماسسٹ نھلۃ عبدالحمید کا کہنا تھا کہ الوادی الجدید کا علاقہ مصر کے کل رقبے کا 44 فیصد ہے، ایک بچھو سے نصف ملی گرام زہر حاصل ہوتا ہے، مکمل ایک گرام زہر حاصل کرنے کے لیے تین ہزار سے ساڑھے تین ہزار بچھو جمع کرنا پڑتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ وادی الجدید میں چار سے پانچ قسم کے بچھو پائے جاتے ہیں اور ایک گرام بچھو کا زہر ساڑھے چھ سے سات ہزار ڈالر میں ملتا ہے۔

نھلۃ عبدالحمید نے بتایا کہ بچھو سے نکالا جانے والا سیال زہر تھرماس میں منتقل کرکے قاہرہ بھیج دیا جاتا ہے۔ ابو السعود نے بچھو کا زہر نکانے کے لیے ایک لیباریٹری بھی قائم کی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں