site
stats
عالمی خبریں

سمندری طوفان مورا بنگلہ دیش اورمیانمارکے ساحلوں سے ٹکرا گیا

ڈھاکہ : سری لنکا میں تباہی کے بعد بنگلہ دیش اور میانمار سمندری طوفان مورا کا نشانہ بن گئے۔ بنگلا دیش میں لاکھوں افراد بے گھر ہوگئے، تقریباً دس لاکھ افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کر دیا گیا۔

شدید طوفان منگل کو کاکس بازار کی بندرگاہ اور چٹاگانگ شہر کے درمیان آیا۔ اُس وقت ہوا کی رفتار ایک سو سترہ کلومیٹر فی گھنٹہ تھی۔

اطلاعات کے مطابق بنگلہ دیش میں سمندری طوفان کی وجہ سے پانچ لاکھ افراد بے گھر ہو گئے اور درجنوں ہلاکتیں ہوئیں ہیں۔

میانمار میں سمندری طوفان نے روہنگیا مسلمانوں کے کیمپوں میں بھی تباہی مچا دی۔ محکمہ موسمیات نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ مورا طوفان سے میدانی اور ساحلی علاقے چار سے پانچ فٹ تک پانی میں ڈوب سکتے ہیں۔

بنگلا دیش میں ہنگامی صورت حال کو مانیٹر کرنے والے سرکاری افسرکے مطابق 3 لاکھ افراد کو 400 اسکولوں اور دیگر سرکاری عمارتوں میں بنائی گئی پناہ گاہوں میں منتقل کیا گیا ہے۔

حکام نے بتایا کہ طوفان سے ہزاروں گھروں کو نقصان پہنچا اور کئی درخت گر گئے، طوفان کے باعث ماہی گیروں کے سمندر میں جانے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

مزید پڑھیں : ماسکو :طوفان سے نظام زندگی درہم برہم،11 افراد ہلاک

یاد رہے کہ ماسکو میں طوفان کے باعث 13 افراد ہلاک ہوگئے ہیں، سری لنکا میں بارش ، سیلاب اور لینڈ سلائڈنگ کی وجہ سے ہلاکتوں کی تعداد 180 ہوگئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top