The news is by your side.

Advertisement

اسپیکر سندھ اسمبلی کے گھر کے سیکورٹی گارڈ نے خود کشی کر لی

کراچی: اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے گھر پر مامور سیکورٹی گارڈ نے خود کشی کر لی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے ڈیفنس میں زمزمہ میں واقع آغا سراج درانی کے گھر پر تعینات سیکورٹی گارڈ نے خود کشی کر لی ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ گارڈ کی شناخت 22 سالہ رب نواز کے نام سے ہوئی ہے، رب نواز نے خود کو گولی مار کر زندگی کا خاتمہ کیا، ابتدائی طور پر خود کشی کی وجہ معلوم نہیں ہو سکی ہے۔

متوفی چوکیدار گھر کے باہر بنی چوکی پر تعینات تھا، سینے پر ایس ایم جی کی گولی لگنے سے جاں بحق ہوا، پولیس کو گھر کے ملازمین نے بتایا کہ متوفی نے کبھی پریشانی یا ذہنی دباؤ کا ذکر نہیں کیا، پولیس کا کہنا ہے کہ گولی چلنے کا واقعہ اتفاقی بھی ہو سکتا ہے۔

خیال رہے کہ اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے خلاف احتساب عدالت میں ایک ریفرنس بھی زیر سماعت ہے، ریفرنس میں آغا سراج درانی کی اہلیہ 4 بیٹیاں اور 2 بیٹے مفرور ہیں۔

اس سال پیپلزپارٹی کی حکومت دیکھ رہا ہوں، آغا سراج درانی

نیب حکام نے اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کا ریفرنس دائر کرنے سے قبل انھیں گزشتہ سال 20 فروری کو اسلام آباد سے گرفتار کیا تھا، دائر ریفرنس میں آغا سراج سمیت 20 ملزمان کو نامزد کیا گیا تھا، جن پر ایک ارب 60 کروڑ روپے کی کرپشن کا الزام ہے۔

گزشتہ برس دسمبر میں اثاثہ جات کیس میں گرفتار سندھ اسپیکر اسمبلی آغا سراج درانی ضمانت سندھ ہائی کورٹ نے منظور کر لی تھی تاہم ان کا نام ای سی ایل میں ڈالے جانے کا حکم جاری کر دیا تھا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں