The news is by your side.

Advertisement

پنڈورا پیپرز کے بعد سینیٹر فیصل واوڈا کا پہلا ردِعمل

اسلام آباد : سینیٹر فیصل واوڈا نے پنڈوراپیپرزمیں نام آنے پر خود کو احتساب کیلئے پیش کرنے کا اعلان کردیا اور درخواست کی انکوائری ٹیم 14گھنٹےروزانہ کام کر کے 5 دن میں نتیجہ دے۔

تفصیلات کے مطابق پنڈوراپیپرز کے بعد سینیٹر فیصل واوڈا کا پہلا ردعمل سامنے آگیا ، فیصل واوڈا نے وزیراعظم کی جانب سے پینڈورا پیپرز کی انکوائری کےفیصلے کاخیر مقدم کرتے ہوئے کہا یہ فیصلہ صرف عمران خان صاحب ہی کر سکتے ہیں۔

فیصل واوڈا نے خود کو احتساب کیلئے پیش کرنے کا اعلان کرتے ہوئے درخواست کی کہ انکوائری ٹیم 14گھنٹےروزانہ کام کر کے 5 دن میں نتیجہ دے اور طریقہ کار ایسا ہو کہ قوم بھی دیکھ سکے اور آغاز مجھ سے کریں ،ٹیسٹ کیس بنائیں۔

ان کا کہنا تھا کہمیں غلط ثابت ہوا تو سزا دیں ، میں صحیح ہواتو فیصلہ ہو کہ غلط بیانی والےنام نہادصحافیوں کوکیا سزا ملے گی؟

خیال رہے آئی سی آئی جے کی جانب سے ’’پنڈورا پیپرز‘‘جاری کئے گئے تھے، پیپرزمیں پاکستان کی سات سو سے زائد سیاسی ،کاروباری شخصیات،سابق فوجیوں اوران کے اہل خانہ کے نام شامل ہیں۔

پنڈورا پیپرز میں واضح طور لکھا گیا تھا کہ دستاویز کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی اپنی کوئی آف شور کمپنی نہیں جبکہ موجود حکومت کے تین وزیروں سمیت کئی اہم لوگوں کے نام آف شورکمپنیاں نکلیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں