The news is by your side.

Advertisement

ایک اور ملک نے کرونا کی حیرت انگیز افریقی دوا منظور کر لی

سینیگال: یورپ اور امریکا کے لیے نہایت مہلک ثابت ہونے والے کرونا وائرس کی حیرت انگیز افریقی دوا کی شہرت پھیلتی جا رہی ہے، ایک اور افریقی ملک نے مڈغاسکر کا تیار کردہ مشروب مریضوں پر استعمال کرنے کے لیے منظور کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مغربی افریقا کے ملک جمہوریہ سینیگال نے مڈغاسکر کی ہربل دوا ‘کو وِڈ آرگینکس’ (CVO) کے کرونا مریضوں پر کلینکل ٹرائلز کی منظوری دے دی ہے، یہ ایک مشروب ہے جس کے بارے میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ یہ کرونا وائرس کی شافی دوا ہے۔

جمعرات کو سینیگالیز سائنٹفک کمیٹی کے سربراہ داؤدہ اینڈی نے میڈیا کو بتایا کہ ہم نے ارٹیمیسیا (مشروب کا بنیادی جز) استعمال کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے، ہم اسے سائنسی طور پر پرکھنے والے ہیں، ہمیں اس سلسلے میں حکومت کی جانب سے گرین سگنل مل چکا ہے۔

مڈغاسکر سے کرونا کی حیرت انگیز دوا سے بھرا جہاز تنزانیہ پہنچ گیا

تاہم سینیگال کے بڑے سائنس دان نے لوگوں کو سیلف میڈیکیشن (خود علاجی کے عمل) سے منع کر دیا ہے، انھوں نے لوگوں کو مذکورہ مشروب اپنے طور پر استعمال کرنے سے بھی خبردار کیا، اور کہا کہ صرف طبی نگرانی میں اس کا استعمال کیا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ کرونا وائرس کی یہ ہربل دوا نہ صرف کرونا انفیکشن کے مریضوں بلکہ اس سے بچاؤ کے لیے بھی استعمال کی جا سکتی ہے۔ سینیگال کی وزارت صحت کے حکام کا کہنا تھا کہ ارٹمیسیا کے کلینکل ٹرائلز شروع کر دیے گئے ہیں۔

خیال رہے کہ سینیگال میں کرونا وائرس سے اب تک 17 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جب کہ ملک میں وائرس کے 1,634 مریض سامنے آئے، جن میں سے 643 صحت یاب ہو چکے ہیں۔

کرونا وائرس کا مذکورہ مشروب (Covid Organics) گزشتہ ماہ مڈغاسکر کے صدر آنڈری رجولینا نے لانچ کیا تھا، اسے مڈغاسکر کے سائنسی ادارے مالاگاسی انسٹی ٹیوٹ آف اپلائیڈ ریسرچ نے تیار کیا ہے۔ سینیگال کے صدر میکی سال نے مڈغاسکر کو کرونا کا ادویاتی علاج تلاش کرنے پر سلام بھی پیش کیا تھا۔

ادھر عالمی ادارہ صحت (WHO) کے افریقا کے ریجنل ڈائریکٹر نے میڈیا بریفنگ میں کہا ہے کہ انھوں نے مڈغاسکر حکومت کو مشورہ دیا کہ وہ اس مشروب کا کلینکل ٹرائل شروع کرے، ہم بھی ان کے ساتھ اشتراک کے لیے تیار ہیں۔ دوسری طرف جنوبی افریقا نے بھی کووِڈ آرگینکس کے سائنسی تجزیے کے لیے مڈغاسکر کو تعاون پیش کیا ہے۔ اب تک کئی افریقی ممالک کو یہ مشروب بھجوایا جا چکا ہے۔

یہ مشروب ایک بوٹی ارٹمیسیا (artemisia) اور دیگر دیسی جڑی بوٹیوں سے تیار کیا گیا ہے، ارٹیمیسیا ایک ایسی بوٹی ہے جسے ملیریا کی دوا میں استعمال کیا جاتا ہے اور اس کی افادیت تصدیق شدہ ہے، تاہم ڈبلیو ایچ او کا کہنا ہے کہ اس بوٹی کے کچھ اجزا باقاعدہ طور پر کشید کر کے دوا میں استعمال کیے جاتے ہیں، بذات خود یہ بوٹی ملیریا کو ٹھیک نہیں کرتی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں