The news is by your side.

Advertisement

سینئر ٹی وی اداکارہ نے اپنی دکھ بھری داستان سنادی

کراچی : پاکستان شوبز انڈسٹری کی سینئر اداکارہ عصمت زیدی نے اپنی نجی زندگی کی سب سے بڑی آزمائش سے متعلق اہم انکشاف کیا ہے۔

گزشتہ26 سال سے متعدد ٹی وی ڈراموں میں اداکاری کے جوہر دکھانے والی سینئر اداکارہ عصمت زیدی نے ایک انٹرویو میں سابقہ شوہر کے حوالے کچھ باتیں شیئر کیں۔

ایک ویب شو کو بطورِ مہمان انٹرویو دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ میرے شوہر نے دوسری شادی کی خاطر مجھے زبردستی طلاق دی لیکن جب طلاق ہوئی تو لوگوں نے مجھ پر بھی بہت تنقید کی۔

لوگوں کا کہنا تھا کہ تُم پر اور تمہارے بچوں پر طلاق کا کوئی اثر نہیں ہوا عصمت زیدی نے کہا کہ میں نہیں چاہتی تھی کہ میرے بچوں پر میری طلاق کی وجہ سے کوئی بُرا اثر پڑے، اسی لیے میں اُنہیں اس مسئلے کا محسوس ہی نہیں ہونے دیتی تھی۔

اداکارہ عصمت زیدی نے کہا کہ طلاق سے قبل میں نے اپنے شوہر سے کہا تھا کہ اب ہماری بیٹی بڑی ہورہی ہے تو لہٰذا آپ مجھے طلاق نہ دیں۔

عصمت زیدی نے کہا کہ میں نے اپنے شوہر سے کہا تھا کہ اگر آپ دوسری شادی کرنا چاہتے ہیں تو کرلیں لیکن مجھے طلاق نہ دیں جس پر میرے شوہر کی ہونے والی دوسری بیوی نے صاف انکار کردیا اور کہا کہ سب کچھ ختم کرکے ہی شادی ہوگی۔

اُنہوں نے کہا کہ طلاق کے بعد میرے شوہر نے مجھ سے اُن کا گھر چھوڑنے کو کہا تاکہ وہ اپنی دوسری بیوی کو وہاں لاسکیں لیکن میرے سُسرال والوں نے میرا بہت ساتھ دیا۔

میرے سسرال والوں نے کہا کہ عصمت ہی اس گھر کی حقیقی بہو ہے، اس گھر سے نہ کوئی جائے گا اور نہ ہی یہاں کوئی نیا شخص آئے گا۔

ایک سوال کے جواب میں سینئر اداکارہ نے کہا کہ مجھے سمجھ نہیں آتا کہ خواتین طلاق کے بعد کیوں روتی ہیں؟ ایسے شخص کے لیے کیا رونا جو آپ کو چھوڑنا چاہتا ہو۔

اُنہوں نے خواتین سے کہا کہ رویا وہاں جاتا ہے جہاں آپ کا شوہر انتقال کرجائے، طلاق دینے والے کے لیے رونا فضول ہے۔

عصمت زیدی نے مزید کہا کہ میں بھی چاہتی تھی کہ میرا گھر نہ ٹوٹے لیکن میرے شوہر کو اس بات کی پرواہ نہیں تھی وہ کسی دوسری عورت کو ہی لانا چاہتے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں