The news is by your side.

Advertisement

ملازم قتل کیس، ن لیگی ایم پی اے کی بیٹی کی ضمانت منظور

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے ن لیگی ایم پی اے کی بیٹی کو ملازم قتل کیس میں درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے پولیس کو گرفتار کرنے سے روک دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس چوہدری مشتاق احمد اور جسٹس طارق افتخار پر مشتمل دو رکنی بنچ نے ملازم قتل کیس میں درخواست ضمانت کی سماعت کی۔

فوزیہ اسلام کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ملزمہ پر گھریلو ملازم کو قتل کرنے کا جھوٹا الزام لگایا گیا ہے ملازم بیمار تھا جس کو ہسپتال لے جا کر علاج کروایا گیا مگر وہ جانبر نہ ہو سکا۔

وکیل نے مزید کہا کہ انسداد دہشتگردی عدالت سے ضمانت ملنے پر پولیس تحقیقات بھی پیش ہوتی رہی مگر اب عدالت نے اس کی ضمانت مسترد کر دی ہے، عدالت ضمانت منظور کرتے ہوئے پولیس کو گرفتار کرنے سے روکے تاکہ وہ شامل تفتیش ہو کر اپنی بے گناہی ثابت کر سکے ۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد ملزمہ فوزیہ اسلام کی ایک لاکھ روپے کے مچلکوں کے عوض ضمانت منظور کرتے ہوئے پولیس کو گرفتار کرنے سے روک دیا۔


مزید پڑھیں: رکن اسمبلی کی بیٹی کے مبینہ تشدد سے ملازم ہلاک‘ بہن زخمی


واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کی رکن صوبائی اسمبلی شاہ جہاں کی بیٹی فوزیہ کے مبینہ تشدد سے گھریلو ملازم سولہ سالہ اختر جاں بحق جبکہ اس کی گیارہ سالہ بہن شدید زخمی ہوگئی تھی، تشدد کا نشانہ بننے والی عطیہ کا کہنا تھا کہ ہم پرتشدد لوہے کے راڈ اور ڈنڈوں سے کیا جاتا تھا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں