The news is by your side.

Advertisement

شدید سردی، امریکی ریاست میں پانی اور بجلی بھی غائب، خوفناک مناظر

امریکی ریاست ٹیکسس میں تاریخ کے بدترین برفانی طوفان نے تباہی مچادی، لاکھوں لوگ 2 روز سے پانی اور بجلی کی فراہمی سے محروم ہیں، سخت موسم کے باعث اب تک 25 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق امریکا کی کئی جنوبی ریاستیں اس وقت شدید برفانی طوفان کی لپیٹ میں ہیں تاہم ریاست ٹیکسس سب سے زیادہ متاثر ہوئی ہے۔

ریاست میں درجہ حرارت منفی 18 ڈگری سینٹی گریڈ ہے اور ایسے سرد ترین موسم میں تقریباً 20 لاکھ کے قریب افراد 2 روز سے پانی و بجلی سے محروم ہیں۔

لوگ لکڑیاں جلا کر خود کو گرم رکھنے کی کوشش کر رہے ہیں جس کے باعث لکڑیوں کی قلت پیدا ہوگئی ہے، علاوہ ازیں گروسری اسٹورز میں بھی اشیائے ضرورت کم پڑ گئی ہیں۔

ہیٹنگ سسٹم معطل ہوجانے کے باعث گھروں میں موجود اشیا برف بن چکی ہیں۔

ایک خاتون نے سوشل میڈیا پر اپنے فش ٹینک کی تصویر شیئر کی جو مکمل طور پر جم چکا ہے اور اس کے اندر موجود مچھلی مرچکی ہے۔

شہر ڈلاس سے ایک اور تصویر سامنے آئی جس میں ایک گاڑی لیک ہوتے پانی کے پائپ کے نیچے کھڑی تھی جو اب جم چکی ہے۔

شدید موسمی حالات اور حادثات کے باعث اب تک 21 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

حکام کے مطابق یہ برفانی طوفان 30 سالہ تاریخ کا بدترین طوفان ہے، حکام نے حالات مزید بگڑنے کی وارننگ بھی جاری کی ہے۔

نیشنل ویدر سروس کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں مزید برفانی طوفانوں کا امکان ہے جس سے لگ بھگ 15 کروڑ شہری متاثر ہوں گے، اس وقت ملک کا 73 فیصد سے زائد حصہ مکمل طور پر برف سے ڈھکا ہوا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں