The news is by your side.

Advertisement

سارک ممالک کی ترقی میں بھارت بڑی رکاوٹ ہے، شاہ محمود قریشی

نیویارک: سارک ممالک کے وزرائے خارجہ کی سائیڈ لائن کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بھارت سارک ممالک کی ترقی میں ایک بڑی رکاوٹ ہے۔

شاہ محمود نے بھارت کے رویے کو نا مناسب قرار دیتے ہوئے کہا کہ بھارت کے 1 ارب 80 کروڑ عوام کو فیصلہ کرنا ہے کہ انھیں خطے میں امن چاہیے یا نہیں۔

وزیرِ خارجہ نے کانفرنس سے خطاب میں سارک ممالک کی ترقی میں بھارت کو رکاوٹ قرار دیا، انھوں نے پاک بھارت وزرائے خارجہ کی ملاقات کے حوالے سے کہا ’بھارت کا رویّہ نا مناسب ہے۔‘

تجزیہ کاروں نے کانفرنس میں سشما سوراج کا رویہ سفارتی آداب کے منافی قرار دیا

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہمیں خطے کی ترقی کے لیے آگے بڑھنا ہوگا، آگے بڑھنے کا راستہ ملاقاتیں ہیں، بھارتی رویے میں تبدیلی تک سارک ممالک اہداف حاصل نہیں کر سکتے۔

دریں اثنا نیویارک میں منعقدہ سارک ممالک کے وزرائے خارجہ کی سائیڈ لائن کانفرنس میں بھارتی وزیرِ خارجہ سشما سوراج نے اپنا بیان دیا اور کانفرنس سے چلی گئیں۔


یہ بھی پڑھیں:  وزیرِ خارجہ عالمی برادری کے سامنے پاکستان کا مقدمہ پیش کر رہے ہیں، ملیحہ لودھی


سشما سوراج نے پاکستانی وزیرِ خارجہ کا بیان سننے کی زحمت تک نہیں کی۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ بھارتی وزیرِ خارجہ کی حرکت سفارتی آداب کے منافی ہے۔

سارک ممالک کے وزرائے خارجہ کی سائیڈ لائن کانفرنس میں سشما سوراج تھوڑی دیر رہیں، انھوں نے سفارتی آداب کے منافی رویہ اختیار کرتے ہوئے بھارتی میڈیا کو بھی لفٹ نہ کرائی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں