The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب نے پیکیج دے کر کوئی شرط عائد نہیں کی، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ سعودی عرب کا پیکیج کل 6.2 ارب ڈالر ہے، سعودی عرب نے کوئی شرط عائد نہیں کی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، شاہ محمود قریشی نے کہا کہ طالبان کو جب تک اپنے سسٹم میں نہیں لائیں گے تب تک حالات ٹھیک نہیں ہوں گے، یہ کہنا کہ پاکستان سب کچھ کرے درست نہیں ہے، طالبان ہماری جیب میں نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ امریکا کو پیغام بھجوادیا کہ آگے کا راستہ صرف مذاکرات ہی ہے، آج امریکا خود مذاکرات کے لیے کوشش کررہا ہے۔

یمن میں فوج نہیں بھجوائی جائے گی

شاہ محمود قریشی

وزیر خارجہ نے کہا کہ سعودی عرب کا پیکیج کل 6.2 ارب ڈالر کا ہے، سعودی عرب نے کوئی شرط عائد نہیں کی، ہماری ویزا فیس 300 سے 2 ہزار ریال تک بڑھا دی گئی، سعودی حکام نے یقین دہانی کرائی ہے کہ فیصلہ واپس لیا جائے گا، سعودی عرب کے ساتھ پاکستان کے تعلقات دیرینہ ہیں۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ایران کو سعودی عرب سے تعلقات پر کوئی اعتراض نہیں ہے، یمن کے حوالے سے ہمارے موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئے گی، یمن میں فوج نہیں بھجوائی جائے گی، اسلامی فوجی اتحاد میں ہمارے کردار میں کوئی تبدیلی نہیں آرہی ہے، ایران کو سعودی عرب سے تعلقات پر کوئی اعتراض نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکا میں بہت سے بھارتی اسٹافر ہیں، ان کا اثرو رسوخ زیادہ ہے، نہیں لگتا بھارت الیکشن تک پاکستان سے مذاکرات کے لیے آگے آئے گا۔

وزیر خارجہ کے مطابق چین کے ساتھ ہمارا تعلق سی پیک کے علاوہ بھی ہے، سی پیک کے اگلے فیز کا آغاز ہوگیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں