شہباز شریف کا ریمانڈ : احتساب عدالت نے تفصیلی فیصلہ جاری کردیا - وائٹ کالر کرائم
The news is by your side.

Advertisement

شہباز شریف کا ریمانڈ : احتساب عدالت نے تفصیلی فیصلہ جاری کردیا

لاہور : احتساب عدالت نے شہباز شریف کے دیئے گئے ریمانڈ کے فیصلے پر کہا ہے کہ دلائل سے ظاہر ہوتا ہے یہ وائٹ کالر کرائم ہے، حقائق سامنے لانے کی ضرورت ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت نے شہباز شریف کے جسمانی ریمانڈ سے متعلق فیصلہ جاری کردیا، عدالتی فیصلے میں ملزم کے ریمانڈ میں گرفتاری کی وجوہات بتائی گئی ہیں۔

عدالت کا کہنا ہے کہ دیے گئے دلائل سے ظاہر ہوتا ہے یہ وائٹ کالر کرائم ہے، یہ میگا کرپشن کا معاملہ ہے، حقائق سامنے لانے کی ضرورت ہے۔

عدالت کا مزید کہنا ہے کہ ملزم نے اپنے اختیارات سے کیوں تجاوزکیا، یہ پوچھا جائے، اس لیے عدالت شہبازشریف کا 10دن کا ریمانڈ منظور کرتی ہے، عدالت نے حکم دیا کہ ملزم کو16اکتوبرکو دوبارہ پیش کیا جائے۔

احتساب عدالت کے فیصلے میں کہا گیا ہے کہ مخالف وکیل نے ملزم کے ریمانڈ کی استدعا کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ شہبازشریف وزیراعلیٰ پنجاب ہونے کے باوجود کیس انکوائری میں شامل ہوتے رہے ہیں، میرے مؤکل کو نیب نے احد چیمہ اور فوادحسن فواد کے روبرو بھی بٹھایا۔

نیب پراسیکیوٹر وارث علی نے دلائل دیتے ہوئے شہبازشریف کے15روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی، عدالت کا مزید کہنا ہے کہ2013میں پی ایل ڈی سی نے سب سے کم بولی لگانے والی کمپنی کو ٹھیکہ دیا۔

پی ایل ڈی سی موبلائزیشن ایڈوانس کے طور پر ساڑھے7کروڑ رقم کنٹریکٹر کو دی،2013میں شہباز شریف نے ٹھیکہ لینے والی کمپنی کیخلاف انکوائری کاحکم دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں