The news is by your side.

Advertisement

شہباز شریف نے انتخابی اصلاحات کے لیے بلایاگیا اجلاس مسترد کر دیا

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر میاں شہباز شریف نے انتخابی اصلاحات کے لیے بلایاگیا اجلاس مسترد کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کے بعد شہباز شریف نے بھی انتخابی اصلاحات کے لیے اسپیکر قومی اسمبلی کی جانب سے بلایا گیا اجلاس مسترد کر دیا ہے۔

واضح رہے کہ اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے گلگت بلتستان انتخابات کے معاملے پر 28 ستمبر کو اجلاس طلب کر رکھا ہے۔ شہباز شریف نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ اسپیکر کو گلگت بلتستان کے انتخابی امور میں مداخلت کا کوئی اختیار نہیں ہے۔

اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ گلگت بلتستان حساس قومی معاملہ اور کشمیر کاز سے جڑا ہوا ہے، موجودہ حکومت اس معاملے کو اپنی سیاست کی بھینٹ نہ چڑھائے، اور وفاقی حکومت جی بی میں شفاف انتخابات کے عمل میں رکاوٹ نہ بنے۔

گلگت بلتستان الیکشن: پیپلز پارٹی کا اسپیکر کے طلب کردہ اجلاس کے بائیکاٹ کا فیصلہ

شہباز شریف نے کہا فسطائی اور آمرانہ رویہ دیکھتے ہوئے کوئی تعاون نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اے پی سی کے نمائندہ اجلاس میں منظور قرارداد اور فیصلوں کی پاسداری کریں گے، حکومت نے ہر تعاون کو ٹھوکر ماری اور اپنی سیاسی ڈراما بازی کے لیے استعمال کیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز پاکستان پیپلز پارٹی نے بھی گلگت بلتستان میں الیکشن سے متعلق اسپیکر اسد قیصر کے طلب کردہ اجلاس کے بائیکاٹ کا فیصلہ کیا تھا، بلاول بھٹو نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر پیغام میں کہا کہ قومی اسمبلی اسپیکر اور وفاقی وزرا کاگلگت بلتستان الیکشن سے کوئی لینا دینا نہیں ہے، ہم گلگت بلتستان الیکشن میں وفاقی حکومت کی مداخلت کی مذمت کرتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں