The news is by your side.

Advertisement

استعفے ابھی نہیں دئیے جارہے، مشاورت سے فیصلہ ہوگا، شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ استعفے ابھی نہیں دئیے جارہے ، مشاورت سے فیصلہ ہوگا، لانگ مارچ سمیت تمام فیصلے پی ڈی ایم پلیٹ فارم سے ہوتے ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام الیونتھ آور میں گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ استعفے کا آپشن موجود ہے تمام فیصلے مشاورت سے ہوتے ہیں، استعفوں کا فیصلہ بھی مشاورت سے ہوگا۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پی ڈی ایم جو بھی فیصلے کرے گی سب اس کے پابند ہوں گے، میرا خیال ہے کہ تمام ارکان کے استعفے پارٹی کو موصول ہوگئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ نئے انتخابات کے بغیر ملک آگے نہیں بڑھ سکتا، ڈائیلاگ کی کوئی بات نہیں، ڈائیلاگ وہاں ہوتے ہیں جہاں کچھ حاصل ہوتا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ لندن میں نواز شریف سے میری ملاقات نہیں ہوئی، ان سے بات ہوئی تھی والدہ کے انتقال پرتعزیت کی، نواز شریف اپنی رائے کا اظہار ہر پی ڈی ایم میٹنگ میں کرتے ہیں، ان کی واپسی صحت سے مشروط ہے۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ محمد علی درانی کیوں ملاقاتیں کررہے ہیں اس بارے میں علم نہیں ہے، شہباز شریف سے جب ملاقات ہوگی تو درانی سے ملاقات کا پوچھ لوں گا۔

شاہد خاقان عباسی نےکہا کہ سیاست عوام کے دباؤ سے ہوتی ہے ، عوام کے دباؤ سے حکومت ہٹا سکتے ہیں، آج عوام کی رائے پی ڈی ایم کے ساتھ ہے۔

انہوں نے کہا کہ آئی ایس پی آر نے کہا سیاست میں مداخلت نہیں کررہے جو اچھی بات ہے، ہم بھی یہی کہہ رہے ہیں ملک آئین کے مطابق چلے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں