The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم خاقان عباسی کی نواز شریف سے ملاقات، نئی کابینہ کی تشکیل کیلئے مشاورت

اسلام آباد: نو منتخب وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے نااہل سابق وزیراعظم نوازشریف سے ملاقات کی اور نئی کابینہ میں شامل وزرا کے انتخاب کیلئے مشاورت کی۔

تفصیلات کے مطابق نو منتخب وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے نااہل سابق وزیراعظم نوازشریف سے ملاقات کیلئے مری پہنچے،ملاقات میں نوازشریف نے انہیں وزیراعظم منتخب ہونے پر مبارکباد دی اور نیک خواہشات کا اظہار کیا جبکہ وفاقی کابینہ کی تشکیل  سے متعلق مشاورت کی گئی۔

دوسری جانب سابق وزیراعظم نواز شریف کی سربراہی میں مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کا اجلاس ہوا، جس میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، سابق وزیرخزانہ اسحاق ڈار، چوہدری نثار، احسن اقبال، پرویز رشید، مہتاب عباسی، حمزہ شہباز اور دیگر پارٹی رہنما شریک ہوئے۔

ذرائع کے مطابق نئی کابینہ میں چوہدری نثار کوئی ذمہ داری نہیں لیں گے، وزارت داخلہ کا قلمدان کیلئے لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ اور عبدالقیوم مضبوط امیدوار ہیں جبکہ نیب ریفرنس کا سامنا کرنے والے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو نئے سیٹ اپ میں بھی خزانچی کا عہدہ ملنے کاامکان ہے، تجارتی سرگرمیاں خرم دستگیر ہی دیکھیں کے اور قانون کا قلمدان زاہد حامد کو دیئے جانے کا امکان ہے۔

ذرائع کے مطابق سابق کابینہ میں زیادہ ردوبدل نہیں کیا جائے گا، شاہد خاقان عباسی نااہل ہونے والے وزیراعظم نوازشریف کی ٹیم کے ساتھ ہی حکومت چلائیں گے۔

خیال رہے کہ شاہد خاقان عباسی کی وزارت عظمیٰ کا حلف اٹھانے کے بعد سابق وزیراعظم سے پہلی ملاقات ہوگی، جس میں توقع ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف بھی شرکت کرینگے۔

ترجمان وزیراعظم ہاؤس کے مطابق وفاقی کابینہ آج شام ساڑھے 5 بجے ایوان صدر میں حلف اٹھائے گی، جہاں صدر مملکت ممنون حسین نئے وزرا سے حلف لیں گے۔

یاد رہے گذشتہ روز قومی اسمبلی کے اجلاس میں مسلم لیگ ن کے امیدوار شاہد خاقان عباسی کو پاکستان کا نیا وزیر اعظم منتخب کیا گیا تھا ، انہوں نے 221 ووٹ حاصل کیے، جس کے بعد صدر ممنون حسین نے نو منتخب وزیر اعظم سے حلف لیا۔


مزید پڑھیں : نو منتخب وزیراعظم شاہد خاقان عباسی ںے اپنے عہدے کا حلف اُٹھا لیا


وزیراعظم منتخب ہونے کے بعد قومی اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ملک کے تمام ادارے ایک کشتی میں سوار ہے اور اگر کشتی میں سوراخ ہوجائے تو پوری کشتی الٹ جاتی ہے، پی ٹی آئی کی لیڈرشپ کا بھی شکرگذار ہوں جو گالی گلوچ میں ہمیں یاد رکھتے ہیں۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ آیا جس کی کوئی نظیرنہیں تھی اس کے باوجود سپریم کورٹ کے فیصلے کومن وعن قبول کیا تاہم پاکستان کی عوام نے سپریم کورٹ کے فیصلے کوقبول نہیں کیا، سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد نوازشریف نےعہدہ چھوڑ دیا لیکن پارٹی میں کوئی درارڑ نہیں پڑی اور کوئی ایم این اے کہیں نہیں گیا۔

انہوں نے نواز شریف کو عوام کا وزیراعظم قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم لوگ گواہ ہیں کہ نوازشریف پرکوئی کرپشن کا چارج نہیں ہے اور اپوزیشن بھی گواہی دے گی کہ نوازشریف نے کرپشن نہیں کی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں