The news is by your side.

Advertisement

شراب برآمدگی کیس: چالان میں شرجیل میمن شریکِ جرم قرار

کراچی: نجی اسپتال میں شرجیل انعام میمن کے کمرے سے شراب بر آمدگی کے کیس کے چالان میں سابق صوبائی وزیرِ اطلاعات کو شریکِ جرم قرار دے دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے نجی اسپتال میں علاج کے لیے داخل شرجیل میمن کے کمرے سے تین مشکوک بوتلیں برآمد ہوئی تھیں، کیس کے چالان میں انھیں شریکِ جرم قرار دیا گیا ہے۔

چالان کے متن میں لکھا گیا ہے کہ کمرے سے تین بوتلیں ملیں، ایک بوتل میں دو انچ شراب تھی، سی سی ٹی وی میں نامزد ملزمان کی مشکوک سرگرمیاں نظر آئیں۔

یاد رہے کہ یکم ستمبر کو چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کلفٹن میں واقع ضیاء الدین اسپتال کا اچانک دورہ کیا تھا، جہاں نیب کے حکم پر گرفتار شرجیل میمن کو علاج کے لیے منتقل کیا گیا تھا اور اسپتال کے کمرے کو سب جیل قرار دیا گیا تھا۔


تفصیل پڑھیں:  میں چیف جسٹس پاکستان ہوں، آپ کی خیریت معلوم کرنے آیا ہوں، شرجیل میمن سے ملاقات کی اندرونی کہانی


چیف جسٹس نے اسپتال پر چھاپا مار کر سیاسی قیدیوں کے وارڈز کا معائنہ کیا تو پیپلز پارٹی کے رہنما کے کمرے سے شراب کی بوتلیں بر آمد ہوئیں، چیف جسٹس کے استفسار پر شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ یہ بوتلیں ان کی نہیں ہیں۔

بعد ازاں بوتلوں کو لیبارٹری بھیجا گیا جہاں سے رپورٹ آئی کہ بوتلوں میں شہد اور زیتون کا تیل تھا، تاہم اب چالان میں واضح کیا گیا ہے کہ ایک بوتل میں دو انچ شراب موجود تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں