سندھ ہائکیورٹ نے نیب کو انکوائریاں جاری رکھنے کی اجازت دے دی -
The news is by your side.

Advertisement

سندھ ہائکیورٹ نے نیب کو انکوائریاں جاری رکھنے کی اجازت دے دی

کراچی : سندھ ہائی کورٹ نے فیصلے تک نیب کو سندھ میں انکوائریاں جاری رکھنے کی اجازت دے دی جبکہ نیب انکوائری والے ارکان پارلیمنٹ اور افسران کی فہرست بھی طلب کرلی۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں نیب قوانین کی منسوخی کے خلاف درخواستوں پر سماعت ہوئی، عدالت نے نیب انکوائری کا سامنا کرنے والے ارکان پارلیمنٹ، سرکاری افسران کی فہرست طلب کرلی اور نیب کو انکوائریز جاری رکھنے کی اجازت دے دی جبکہ آئندہ سماعت تک نیب کو سندھ میں بھی کارروائی جاری رکھنے کی ہدایت کی۔

درخواست گزار کے وکیل نے کہا کہ سندھ حکومت محکموں کو خط لکھ رہی ہے نیب کے ساتھ تعاون نہیں کیا جائے ، ایڈوکیٹ جنرل نے کہا کہ یہ معاملہ سپریم کورٹ میں بھی زیر التوا ہے ،وفاق اور صوبے کے مابین تنازعہ ہو تو معاملہ سپریم کورٹ میں جاتا ہے ،وفاقی حکومت کے قوانین کا اطلاق صوبے پر نہیں ہوسکتا۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ کیا معاملہ مشترکہ مفادات کونسل میں جائے گا ؟ پراسیکیوٹر جنرل نیب نے کہا کہ ہمیں سپریم کورٹ سے کوئی کاپی نہیں ملی ہے ،سندھ حکومت کے قانون سے ہمارا کام متاثر ہورہا ہے۔


مزید پڑھیں : تحریک انصاف نے سندھ میں نیب کے خاتمے کا بل چیلنج کردیا


ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ مجھے بھی سپریم کورٹ میں درخواست دائر ہونے کی اطلاع نہیں، چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیا خصوصی عدالتوں کو تالا لگادیں ؟ نارکوٹکس اور دیگر عدالتیں بند کردیں ؟ کیا معاملہ مشترکہ مفادات کونسل میں جائے گا؟

عدالت نے عارف علوی ، سول سوسائٹی اور دیگر کی درخواستوں پر بھی فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے سماعت بائیس اگست تک ملتوی کردی۔

یاد رہے کہ نیب آرڈیننس کی منسوخی کیخلاف پی ٹی آئی، ایم کیو ایم اور فنکشنل لیگ نے درخواستیں دائر کر رکھی تھیں۔

واضح رہے کہ حکومت سندھ کی جانب سے احتساب آرڈیننس 1999 کا اطلاق ختم کرنے کے بعد نیب کو صوبے میں کسی کارروائی کا اختیار نہیں رہا ہے۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں