جس نے قانون توڑا انہیں عبرت کانشان بنایا جائے گا،وزیر مملکت شہریارآفریدی
The news is by your side.

Advertisement

جس نے قانون توڑا انہیں عبرت کانشان بنایا جائے گا،وزیر مملکت شہریارآفریدی

اسلام آباد : وزیرمملکت داخلہ شہریارآفریدی کا کہنا ہے کہ عوام کےجان ومال کی حفاظت ریاست کی ذمہ داری ہے، شرپسند عناصر کیخلاف حکومت کا کریک ڈاؤن جاری ہے، جس نے قانون توڑا انہیں عبرت کا نشان بنایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس ہوا، جس میں وزیرمملکت برائے داخلہ شہریارآفریدی نے بتایا کہ 6 نکاتی ایجنڈے پر دن رات کام کر رہے ہیں، 100 دنوں میں میرے افسران کو بہت کام کرناہے، افسران کےذمےاہم ذمہ داریاں ہیں۔

وزیرمملکت برائے داخلہ کا کہنا تھا کہ 3دنوں میں کمیٹی کی ہدایت پر میرے افسران پابند ہوگئے ہیں، 30 نومبر کے بعد ہم اور ہماری حکومت جواب کی پوزیشن میں ہوگی۔

شہریارآفریدی کا کہنا تھا کہ عوام کےجان ومال کی حفاظت ریاست کی ذمہ داری ہے، تحریک لبیک کے ممبران نے شرپسند عناصر سے لاتعلقی ظاہر کی ہے، شرپسند عناصر کیخلاف حکومت کا کریک ڈاؤن جاری ہے جس نےقانون توڑاانہیں عبرت کانشان بنایا جائے گا۔

انھوں نے کہا تمام اپوزیشن پارٹیوں نے کہا تھا ہم آپ کےساتھ ہیں، ریاست کے اندر ریاست بنانے والوں کی نفی کا نام نیا پاکستان ہے، وزیراعظم عمران خان اورپوری حکومت ایک ایجنڈے پر ہے، حکومتی رٹ کوچیلنج کرنےوالوں کیخلاف کارروائی ہو گی۔

مزید پڑھیں : حکومت ریاست کی رٹ پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی، شہریار آفریدی

یاد رہے 4 نومبر کو وزیرِ مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی کی زیرِ صدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا جس میں شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ ہنگامہ آرائی کرنے والوں نے محنت سے حاصل شدہ املاک کو انتہائی بے دردی سے برباد کیا، املاک کو نقصان پہنچانے والوں سے کوئی رعایت نہیں ہوگی۔

وزیرِ مملکت برائے داخلہ نے عوام سے بھی اپیل کی ہے کہ وہ شر پسندوں کی شناخت اور گرفتاری کے سلسلے میں تعاون کریں۔

اس سے قبل بھی شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ تمام قانون نافذ کرنے والے ادارے اور حکومت ایک صفحے پر ہیں۔ حکومت ریاست کی رٹ پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں