The news is by your side.

Advertisement

دبئی کے ولی عہد نے کینسر کے مریض کو 30 لاکھ درہم عطیہ کردیئے

ابوظہبی : دبئی کے ولی عہد اور ایکزیکٹو کونسل کے چیئرمین شیخ حمدان بن محمد راشد المکتوم نے کینسر کے مرض میں مبتلا نوجوان کے علاج کے لیے 30 لاکھ درہم عطیہ کردیئے۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی کے ولی عہد اور ایکزیکیٹو کونسل کے چیئرمین شیخ حمدان بن محمد بن راشد المکتوم اماراتی شہری کو میڈیکل اخراجات پورے کرنے کے لیے بھاری رقم عطیہ کی ہے تاکہ وہ کینسر کا علاج کرواسکے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ متحدہ عرب امارات کے رہائشی نوجوان خلیفہ محمد راشد دافوس نے سماجی رابطے کی ویب سایٹ انسٹاگرام پر ایک ویڈیو پوسٹ کی تھی، ویڈیو میں محمد نے پیغام دیا تھا کہ اس کا علاج کروانا بہت ضروری ہے لیکن علاج کے لیے 30 لاکھ درہم درکار ہیں۔

عرب میڈیا کے مطابق ویڈیو میں نوجوان نے کہا تھا کہ ’اس کے لیے علاج کی منظوری ملنا ناممکن ہے اور میں اتنی بڑی رقم جمع نہیں کرسکتا تو کون دے گا رقم؟

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ کیموتھراپی سے مریض پر کوئی اثر نہیں ہورہا تھا، تاہم کچھ دیر بعد دبئی کے والی عہد نے اعلان کیا کہ ’نوجوان کے علاج کا خرچہ میں اٹھاؤں گا‘ اور نوجوان کی ویڈیو پر کمنٹ کیا کہ ’تم بہادر ہو اور ہم تمہارے ساتھ ہیں‘۔

عرب میڈیا کا کہنا ہے کہ کینسر سے متاثرہ نوجوان تاحال امریکا میں زیر علاج ہے اور ڈاکٹروں کے مطابق وہ صرف مزید تین برس زندہ رہ سکتا ہے، نوجوان نے انسٹاگرام پر ’کیموتھراپی کینسر پر اثر نہیں کررہی‘ کی ویڈیو پوسٹ کرنے کے قبل ہی پھپڑوں کی سرجری کروائی تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں