The news is by your side.

Advertisement

اگر مذاکرات شروع بھی ہوئے تو عمران خان این آر او پر کوئی سمجھوتہ نہیں‌ کرے گا، شیخ رشید

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ وزیراعظم کو مشکل سے نکلنے کے لیے راستہ بنانا آتا ہے، اگر مذاکرات شروع بھی ہوئے تو عمران خان این آر او پر سمجھوتا نہیں کرے گا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ پاکستان ڈیموکریٹک موؤمنٹ لانگ مارچ کے لیے حکمت عملی بنانے کی کوشش کررہی ہے مگر اُسے ناکامی کا سامنا ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’مجھےنہیں معلوم کون کس کوکس کے پاس ملاقات کے لیے بھیج رہاہے مگر سیاست میں مذاکرات کے دروازے کبھی بند نہیں ہوتے، پی ڈی ایم کو سمجھ آگئی ہے کہ ان کابیانیہ ان کے ہی گلے پڑ چکا ہے‘۔

وفاقی وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ ’مسلم لیگ ن نےہمیشہ پیپلزپارٹی کےخلاف ووٹ دیا ہے، دونوں جماعتیں مستقبل میں بھی ایک نہیں ہوں گی اور ایک دوسرے کے خلاف الیکشن لڑیں گی، اگر پی پی نے سینیٹ الیکشن میں حصہ لیا تو مسلم لیگ ن بھی لے گی‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’فضل الرحمان پہلی مرتبہ پچ سےباہر نکل کرکھیل رہے ہیں، وہ اسلام کا نام لے کر اسلام آباد پر نظر جمائے بیٹھے ہیں‘۔

شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ ’میں 2021 میں حالات بہتر دیکھ رہا ہوں، فوج ہرمنتخب حکومت کےساتھ کھڑی ہوتی ہے، جمہوریت کےساتھ فوج کا عہد لازوال ہے‘۔

شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ ’یہ لوگ (اپوزیشن) ڈائیلاگ کےحامی نہیں جبکہ ان پر درج مقدمات سنگین نوعیت کے ہیں، اگر مذاکرات شروع بھی ہوئے تو عمران خان این آر او پر کوئی سمجھوتا نہیں کرے گا کیونکہ وہ فیصلہ کرچکے ہیںکچھ بھی ہوسکتا ہے مگر کرپشن پر کوئی بات نہیں ہوگی‘۔

وفاقی وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ ’اپوزیشن وزیراعظم عمران خان کے بارےمیں غلط اندازے لگارہی ہے، عمران خان اور مشرف میں بہت فرق ہے، عمران کو مشکلات میں راستے بنانا آتے ہیں‘۔

Comments

یہ بھی پڑھیں