حیدر آباد میں بجلی کی بندش،خواجہ سرا بھی سڑک پر نکل آئے -
The news is by your side.

Advertisement

حیدر آباد میں بجلی کی بندش،خواجہ سرا بھی سڑک پر نکل آئے

حیدر آباد: بجلی کی بندش کے خلاف عام شہریوں کی طرح اب خواجہ سرا بھی سڑک پر نکلآئے اور شہریوں کے شانہ بشانہ احتجاج میں حصہ لیتے ہوئے حکومت اور بجلی فراہم کرنے والے ادارے کے خلاف اپنے مخصوص انداز میں نعرے بازی کی۔

اطلاعات کے مطابق بجلی کی طویل بندش کے خلاف سبزی منڈی چوک پر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں خواجہ سرا بھی شریک ہوئے اور حکومت کے خلاف نعرے بازی کی۔خواجہ سرائوں نے اپنے مخصوص انداز میں بجلی کی بندش کے ذمہ داروں کو آڑے ہاتھوں لیا۔

خواجہ سراؤں کا کہنا تھا کہ شدید گرمی اور رمضان المبارک کے مقدس ماہ کے باوجود بجلی کی طویل بندش نے زندگی اجیرن کردی ہے،چار دن سے بجلی کا ٹرانسفر خراب پڑا ہے کئی بار شہریوں نے درخواستیں دیں لیکن اسے کوئی ٹھیک کرنے نہیں آیا اس لیے مجبور ہوکر سڑکوں پر آنا پڑا۔

خواجہ سرائوں نے اپنے مخصوص انداز میں احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ گرمی سے لوگ بیمار ہورہے ہیں اور دو خواجہ سرا انتقال کرگئے، حکومت ضعیف العمر شہریوں کا تو خیال کرے اور بجلی کی مسلسل بحالی کے لیے لازمی اقدامات کرے۔

خواجہ سراؤں اور شہریوں نے اس موقع پر بجلی فراہم کرنے والے ادارے کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور حکومت سے اس ادارے کے خلاف اور بالخصوص ماہ رمضان میں بجلی کی مسلسل فراہمی کا پرزورمطالبہ کیا۔

پولیس کا لاٹھی چارج،کئی مظاہرین کو حراست میں لے لیا

حیدر آباد فرید آباد کے علاقے میں ہونے والے احتجاج پر پولیس نے دھاوا بول دیا، لاٹھی چارج کرتے ہوئے کئی شہریوں کو گرفتار کرلیا۔

اے آر وائی نیوز کے نماندے آفتاب زئی کے مطابق احتجاجی مظاہرے کے دوران پولیس نے لاٹھی چارج کرتے ہوئے متعدد مظاہرین کو گرفتار کرلیا، قبل ازیں مظاہرین نے ٹائر جلائے اور کافی دیر تک سڑک کو ٹریفک کے لیے بند رکھا جس پر پولیس وہاں پہنچ گئی۔

دوسری جانب مظاہرین نے الزام عائد کیا کہ پولیس نے ہوائی فائرنگ کی اور لاٹھی چارج کیا ہم بجلی کی بحالی کے لیے پرامن احتجاج کررہے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں