The news is by your side.

Advertisement

سرکاری ٹی وی اینکر کا خراب رویہ، شعیب اختر لائیو شو کے دوران مستعفی

میزبان اینکر کے خراب رویئے پر پاکستان کرکٹ ٹیم کے لیجنڈ فاسٹ بولر شعیب اختر آن ایئر سرکاری ٹی وی شو سے مستعفی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق سرکاری ٹی وی پر ورلڈکپ ٹرانسمیشن کے دوران شعیب اختر اور سرکاری ٹی وی کے میزبان آمنےسامنے آگئے، ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں نیوزی لینڈ سے میچ جیتنے کے بعد شعیب اختر نے لائیو شو میں مین آف دی میچ حاصل کرنے والے حارث روف کی کارکردگی کی خوب تعریف کی جو میزبان اینکر کو پسند نہ آئی۔

گفتگو کے دوران اینکر نے شاہین شاہ آفریدی کا ذکر کیا تو شعیب اختر نے وضاحت کی کہ وہ حارث رؤف کی بات کررہے ہیں جس پر اینکر جذبات میں آگئے اور لائیو پروگرام میں شعیب اختر کو شو سے جانے کا کہا اور فوری طور پر بریک لے لیا۔

شعیب اختر اور ڈاکٹر نعمان نیاز میں تلخ کلامی کے وقت ویو رچرڈز ،ڈیوڈگاور،عمر گل،راشد لطیف،اظہر محمود اور ثنا میر بھی موجود تھے۔

بریک کے بعد سرکاری ٹی وی کے اینکر نے بات بدلنے کی کوشش کی لیکن شعیب اختر اپنے موقف پر ڈٹے رہے اور انہوں نے بھی لائیو پروگرام کے دوران سرکاری ٹی وی سے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا۔

سوشل میڈیا پر کلپ وائرل ہونے کے بعد شعیب اختر نے بھی لائیو شو کے واقعہ پر اپنا ردعمل دیا، انہوں نے سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک پیغام میں کہا کہ مجھے لائیو شو میں چلے جانے کو کہا، مجھے سمجھ نہیں آیا کہ ڈاکٹر نعمان نیاز نے ایسا کیوں کہا؟

شعیب اختر کا کہنا تھا کہ ٹی وی پر ایک اسٹار کی یوں توہین مناسب نہیں، غیر ملکی اور قومی اسٹارز کیا سوچیں گے کہ یہ کیا ہو رہا ہے؟ میں نے بات سنبھالنے کی کوشش کی لیکن ڈاکٹر نعمان نیاز نے مجھ سے معافی نہیں مانگی، اور کوئی چارہ نہیں تھا، اس لیے میں نے استعفیٰ دے دیا۔

 

Comments

یہ بھی پڑھیں