سابق وزیراعظم نوازشریف جوتے کا نشانہ بن گئے -
The news is by your side.

Advertisement

سابق وزیراعظم نوازشریف جوتے کا نشانہ بن گئے

لاہور: صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں سابق وزیراعظم نوازشریف پر تقریب کے دوران جوتے سے حملہ کیا گیا، عمران خان سمیت دیگر سیاسی رہنماؤں نے واقعے کی مذمت کردی۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف لاہور میں جامعہ نعیمیہ میں ہونے والی تقریب میں خطاب کرنے اسٹیج پر آئے تو ایک شخص کی جانب سے جوتا پھینکا جو نوازشریف کو جا کرلگا۔

جوتا پھینکنے والے شخص کو وہاں موجود افراد نے پکڑلیا اور تقریب سے باہر لے جانے کے بعد سیکورٹی اہلکاروں کے حوالے کردیا۔

واقعے کی وجہ سے تقریب میں شدید بدمزگی پیدا ہوگئی اور نوازشریف بھی مختصر خطاب کرکے واپس روانہ ہوگئے جبکہ تقریب کو بھی وقت سے پہلے ختم کردیا گیا۔


عمران خان کی مذمت


چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے سابق وزیراعظم نوازشریف پرجوتا پھینکنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ
جوتے اورسیاہی پھینکنا غیراخلاقی عمل ہے، عام لوگوں سے کہتا ہوں جوتے اورسیاہی پھینکنا کوئی طریقہ نہیں ہے۔


شاہ محمود قریشی کی مذمت


پی ٹی آئی کے رہنما شاہ محمود قریشی نے نوازشریف پر جوتا پھینکنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جوتا پھینکنے کاعمل انتہائی نامناسب ہے، اس پربہت افسوس ہے، ایسا کرنا انسان کے اپنے ضمیراور اخلاق کے خلاف ہے۔


بلاول بھٹو کی مذمت


چیئرمین پاکستان تحریک بلاول بھٹو زرداری نے نوازشریف پر جوتا پھینکنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ لیڈروں پرجوتا پھینکنے کے واقعات قابل مذمت ہیں، پیپلز پارٹی اپنےآغاز سے ایسے ہتھکنڈوں کی مخالف ہے، ایسے واقعات سیاسی رہنماؤں کی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں۔


رضا ہارون کی مذمت


پاک سرزمین پارٹی کے رہنما رضا ہارون نے نوازشریف پرجوتا پھینکنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ غیرجمہوری اور غیرسیاسی رویوں کی سخت مذمت کی جانی چاہیے، نوازشریف سے اختلاف کیا جاسکتاہے، جواب دیا جا سکتا ہے۔

رضا ہارون نے کہا کہ اگرجوتا پھینکنے کے رویے کو برداشت کیا گیا تو پھرسیاست کواللہ ہی حافظ ہے جبکہ سیاست دانوں کواپنے اندازمیں نرمی پیدا کرنی چاہیے۔


زاہد خان کی مذمت


عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما زاہد خان نے نوازشریف پرجوتا پھینکنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جوتا پھینکنےاورسیاہی پھینکنے جیسے واقعات قابل افسوس ہیں، ہمارے ہاں سیاست کو ذاتی مسئلہ سمجھ لیا جاتا ہے۔

زاہد خان نے کہا کہ سیاست میں گالم گلوچ پہلے نہیں تھا، نظریاتی اختلاف ہوتا تھا، ایسےردعمل کو روکنا معاشرے اورسیاست دانوں کی ذمےداری ہے، ایسی چیزوں کونہیں روکا گیا تو چیزیں مزید خراب ہوں گی۔


وزیر خارجہ خواجہ آصف پر نوجوان نے سیاہی پھینک دی


خیال رہے کہ گزشتہ روز سیالکوٹ میں ورکرز کنونشن سے خطاب کے دوران ایک شخص نے وزیرخارجہ خواجہ آصف کے چہرے پرسیاہی پھینک دی تھی جسے وہاں موجود افراد نے پکڑ کر پولیس کے حوالے کردیا تھا۔


نارووال:‌ وفاقی وزیر احسن اقبال پر جوتے سے حملہ


یاد رہے کہ گزشتہ ماہ 24 فروری کو نارووال میں ہونے والے ورکرز کنونشن کے دوران ایک شخص نے وفاقی وزیراحسن اقبال پرجوتا پھینکا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں