The news is by your side.

Advertisement

درختوں میں بھی جان ہوتی ہے!

درخت کاٹنے والے نے کلہاڑے کو دونوں ہاتھوں سے سر سے اوپر لے جا کر پورے زور سے درخت کے تنے پر چوٹ کرنا چاہی، مگر درخت کی شاخیں کلہاڑے سے وہیں الجھ گئیں۔

اور درخت کاٹنے والے نے کلہاڑے کو وہاں سے نکالنا چاہا تو وہ اس کے ہاتھوں سے چھوٹ کر اس کے پیروں پر آ گرا اور وہ درد سے بلبلاتے ہوئے وہیں بیٹھ گیا۔

’’ہائے!‘‘ شاخیں بے اختیار اس کے پیروں پر جھک آئیں۔

’’کتنی گہری چوٹ آئی ہے!‘‘

(نام ور فکشن رائٹر جوگندر پال کا ایک پُراثر افسانچہ)

Comments

یہ بھی پڑھیں