امریکا میں شٹ ڈاؤن، تفتیشی ادارہ ایف بی آئی بھی لپیٹ میں آگیا، پٹیشن دائر
The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں شٹ ڈاؤن، تفتیشی ادارہ ایف بی آئی بھی لپیٹ میں آگیا

واشنگٹن: امریکا میں شٹ ڈاؤن کے باعث تفتیشی ادارہ ایف بی آئی بھی متاثر ہونے لگا، ملازمین تنخواہوں سے محروم ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق شٹ ڈاؤن کے نتیجے میں ایف بی آئی ایجنٹس تنخواہوں سے محروم ہیں، انتظامیہ نے معاملات فوری حل کرنے پر زور دیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ایف بھی آئی ایجنٹس نے مطالبہ کیا ہے کہ منتخب نمائندے تنخواہوں کی ادائیگی کو یقینی بنائیں۔

ایف بی آئی ایجنٹس کی جانب سے وائٹ ہاؤس اور امریکی کانگریس کو پٹیشن ارسال کردی گئی، پٹیشن میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ ایف بی آئی آپریشنز کے لیے فنڈنگ درکار ہے، فنڈ کی ترسیل کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں۔

مالی مشکلات سے فرائض کی انجام دہی میں مشکلات ہیں، مالی مشکلات کے باعث ایف بی آئی منصوبے جاری نہیں رکھ پارہی، تنخواہیں ادا نہ کیں نوکریاں چھوڑنے پر مجبورہوں گے۔

حکومتی شٹ ڈاؤن: مذاکرات ناکام، ٹرمپ برہمی کا اظہار کرتے ہوئے مذاکرات چھوڑ کر اٹھ گئے

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ڈیموکریٹس ارکان کانگریس کے درمیان حکومت شٹ ڈاؤن سے متعلق مذاکرات گذشتہ روز ناکام ہوگئے تھے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ڈیموکریٹس ارکان کانگریس سے مذاکرات کے دوران برہم ہوگئے اور میز پر زوردار ہاتھ مار کر مذاکرات چھوڑ کر چلے گئے تھے۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز ڈیموکریٹ ارکان کانگریس اور کانگریس کی اسپیکر نینسی پلوسی نے امریکی صدر ٹرمپ کو بحران کا ذمہ دار قرار دیا تھا۔

واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سرحدی دیوار سے متعلق اپنے خطاب میں کہا تھا کہ فیڈرل حکومت میں شٹ ڈاؤن رہے گا کیونکہ ڈیموکریٹس فنڈز فراہم نہیں کررہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں