The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں مصنوعی مریضوں پر عملی تعلیم کے لیے سیمولیشن سینٹر تیار

کراچی: ڈاؤ میڈیکل یونیورسٹی میں مصنوعی مریضوں پر پریکٹیکل تعلیم کے لیے ایک سیمولیشن سینٹر تیار کیا گیا ہے، آج اس مرکز کا وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے افتتاح کیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ سندھ نے ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں آصف رحمان سیمولیشن سینٹر کا افتتاح کیا، انھوں نے کہا کہ سیمولیشن طریقے سے کلینیکل ماحول بنا کر مصنوعی مریض پر علاج کا طریقہ اختیار کیا جاتا ہے۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا سمیولیشنز کے 4 مقاصد ہیں جن میں ایجوکیشن، اسسمینٹ، ریسرچ اور ہیلتھ سسٹم سمیت مریض کی حفاظت کو یقینی بنایا جاتا ہے۔

مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ ریسرچ کے شعبے میں ہمیں آگے بڑھنا ہے، میں پیشے کے اعتبار سے انجنیئر ہوں لیکن سیمولیشن سسٹم پر مجھ سے بہتر یہاں کے ماہرین بات کر سکتے ہیں، اس سینٹر میں میڈیکل تعلیم حاصل کرنے والے بہترین پریکٹیکل تعلیم حاصل کر سکیں گے۔

انھوں نے کہا آصف رحمان سیمولیشن سینٹر 230 ملین روپے کی لاگت سے قائم کیا گیا ہے، اس لاگت میں 30 ملین روپے کلاس-90 نے کنٹریبیوٹ کیے ہیں، جب کہ باقی 200 ملین روپے ڈاؤ یونیورسٹی نے خرچ کیے، وزیراعلیٰ سندھ نے تجویز دی کہ ایک بہت بڑا سیمولیشن سینٹر ڈاؤ یونیورسٹی میں قائم ہو، اور دیگر یونیورسٹیز کے اسٹوڈنٹس بھی اس کی ورچوئل ریئلٹی کے ذریعے تعلیم حاصل کر سکیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں