The news is by your side.

Advertisement

لفظ ’کتے‘ کہنے پرارکان اسمبلی لڑ‌ پڑے

p style=”text-align: right;”>کراچی: سندھ میں ایوان مچھلی بازار بن گیا، اپوزیشن اور حکومتی ارکان کے درمیان لفظ ’کتے‘ کہنے پر جھگڑا شروع ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ اسمبلی اجلاس کے دوران بھی لفظ ’کتے‘ کی گونج سنائی دینے لگی، اپوزیشن اور حکومتی ارکان کتے کہنے پر الجھ پڑے۔

پیپلزپارٹی رہنما مکیش کمار چاؤلہ نے کہا کہ اگر میں کسی کو کتا بولوں تو کیسا محسوس ہوگا، کبھی اپوزیشن کے لیے کتے کا لفظ استعمال نہیں کیا۔

اسپیکر آغا سراج درانی نے جانبداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپوزیشن کی ہی سرزنش کردی، آغا سراج درانی نے کہا کہ گزشتہ روز ایوان کی بے حرمتی کی گئی۔

مزید پڑھیں: سندھ اسمبلی ایک بار پھر بن گئی مچھلی بازار، اپوزیشن کی ہنگامہ آرائی

اسپیکر نے کہا کہ ہر ایک کو احتجاج کا حق ہے اگر باہر جاکر کرتے تو اچھا ہوتا، ایوان سے ویڈیوز بنا کر باہر بھیجی گئیں، اس طرح کریں گے تو موبائل فون لانے پر پابندی لگانا پڑے گی۔

سندھ اسمبلی کے اجلاس گرما گرم بحث کے بعد جمعے تک کے لیے ملتوی کردیا گیا۔

واضح رہے کہ ارکان سندھ اسمبلی میں جھگڑا کوئی نہیں بات نہیں ہے اس سے قبل بھی رکن اسمبلی نصرت عباسی اور پی پی رہنماؤں کے درمیان نوک جھونک ہوچکی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں