The news is by your side.

Advertisement

ایان علی کیس : سندھ ہائی کورٹ کا وفاقی حکومت کو نوٹس

کراچی: سندھ ہائی کورٹ نے ایان علی کا نام ایگزیٹ کنڑول لسٹ سے نہ نکالے جانے پر وفاقی حکومت کو توہینِ عدالت نوٹس جاری کردیا۔

تفصیلات کے مطابق کرنسی اسمنگلنگ کیس میں نامزد سُپرماڈل ایان علی کیس کی سماعت ہوئی، ای سی ایل سے نام نہ نکالے جانے پر وفاقی حکومت اور فریقین کو توہینِ عدالت کا نوٹس جاری کرتے ہوئے سماعت چوبیس اپریل تک ملتوی کردی ہے۔

ملزمہ کے وکیل نے دورانِ سماعت جج سے استفتار کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت سے گزشتہ سماعت میں عدالت نے جواب طلب کیا تھا، مگر حکومت نے کوئی جواب داخل نہیں کرایا گیا، عدالت فریقین کو سخت نوٹس جاری کرے۔

سپریم کورٹ کے حکم نامے کے باوجود گزشتہ دنوں ایان علی کو ائیرپورٹ انتظامیہ نے کراچی کے جناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ بیرون ملک سفر کرنے سے روک دیا تھا۔

قبل ازیں وفاقی وزیر داخلہ نے اس حوالے سے ایف آئی اے سے رپورٹ طلب کی تھی، جس میں ادارے کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا تھا کہ منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات ہونے کے سبب ملزمہ کا نام لسٹ سے خارج کرنا مناسب نہیں ہوگا۔

واضح رہے گزشتہ سال مارچ میں بیرونِ ملک جاتے ہوئے سپر ماڈل ایان علی کی اسلام آباد ائیرپورٹ پر تلاشی کے دوران پانچ لاکھ ڈالر برآمد کیے گئے تھے، جس کے بعد ملزمہ کو گرفتار کر کے اڈیالہ جیل منتقل کردیا گیا تھا مگر کچھ ماہ بعد انہیں ضمانت پر رہا کردیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں: ماڈل گرل ایان علی کسٹم انسپکٹراعجازچوہدری کے قتل کیس میں نامزد

دوسری جانب ایان علی کیس کے اہم گواہ انسپیکٹر اعجاز چوہدری کی بیوہ نے راولپنڈی ہائی کورٹ میں ملزمہ کو شوہر کے قتل میں نامزد کرنے کی درخواست جمع کروادی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں