منگھوپیرمقابلہ ہلاک 11 دشت گردوں‌ میں سے 8 کی شناخت ہوگئی‘ رینجرز -
The news is by your side.

Advertisement

منگھوپیرمقابلہ ہلاک 11 دشت گردوں‌ میں سے 8 کی شناخت ہوگئی‘ رینجرز

کراچی: رینجرز نے کہا ہے کہ منگھوپیر میں ہلاک ہونے والے 11 میں سے 8 دہشت گردوں کی شناخت ہوگئی جبکہ بقیہ کی شناخت کے لیے معلومات اکٹھی کی جارہی ہیں، ہلاک ملزمان کراچی میں دہشت گردی کی منصوبہ بندی کررہے تھے.

ترجمان سندھ رینجرز کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ روز منگھوپیر مقابلے میں ہلاک 11 دہشت گرد ہلاک ہوئے جن میں سے 8 کی شناخت ہوئی جبکہ بقیہ کی شناخت کے لیے معلومات اکٹھی کی جارہی ہیں، دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیموں سے تھا۔

سندھ رینجرز کے مطابق مقابلے میں مارے جانے والے ملک تصدق حسین ڈینیل پرل کے اغوا اور قتل سمیت رینجرز پر حملوں میں ملوث تھا اور اُس کا تعلق لشکر جھنگوی اور جماعت الاحرار سے تھا۔

ترجمان رینجرز اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ تصدق حسین نے افغانستان سے ایک ماہ کی عسکری تربیت حاصل کی اور اپنے ساتھیوں کو پولیس کی حراست سے کالعدم جماعت کے کارندے شہر میں دہشت گردی کی منصوبہ بندی کررہے تھے۔

ہلاک دہشت گرد ملک تصدق حسین کا تعلق لشکرجھنگوی اور جماعت الاحرار سے تھا، جس نے افغانستان سے ایک ماہ کی عسکری تربیت حاصل کی تھی۔

ملک تصدق غیرملکی صحافی ڈینیل پرل کے اغوا اور قتل میں ملوث رہا ہے جبکہ ملزم پولیس اور رینجرز پرحملے کی منصوبہ سازی میں بھی ملوث رہا ہے، ملزم نے رنچھوڑلائن میں ساتھی کوچھڑانے کے لئے پولیس وین پر حملہ بھی کیا تھا،جس کے پیش نظر پولیس ایک کانسٹیبل اور ایک قیدی جاں بحق ہوگئے تھے.

pr-rangers

pr-rqangers1

ترجمان رینجرز نے کہا کہ سنگین جرائم میں ملوث ملزم کے سر کی قیمت 5لاکھ روپے مقرر تھی، ہلاک دہشت گردوں میں شامل نوشاد خان عرف ماما کا تعلق بھی کالعدم تنظیم سے تھا.

مزید پڑھیں:سپرہائی وے: رینجرزقافلےپرحملہ‘جوابی کارروائی میں7دہشت گرد ہلاک

واضح رہے کہ آج صبح سپرہائی وے کاٹھور پررینجرز کے قافلے پردہشت گردوں نےحملہ کیا تھا ،رینجرز کی جوابی کارروائی میں سات دہشت گرد مارے گئے تھے جبکہ ایک اہلکار زخمی ہوگیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں