The news is by your side.

Advertisement

مسافروں کو تھپڑ، پی آئی اے فضائی میزبانوں کے لیے اہم احکامات جاری

کراچی: لاہور سے لندن جانے والی پرواز میں مسافروں کو تھپڑ مارنے کے افسوس ناک واقعے کے بعد پی آئی اے انتظامیہ کی جانب سے فضائی میزبانوں کے لیے اہم احکامات جاری کر دیے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق بیرون ملک جانے والی پی آئی اے کی پروازوں میں مسافروں کا بلک ہیڈ سیٹوں پر قبصہ کر کے بیٹھنے کے معاملے پر انتظامیہ نے نئی ہدایات جاری کر دیں، ذرایع کا کہنا ہے کہ چند دن قبل لاہور سے لندن کی پرواز میں بدتمیزی کا واقعہ پیش آیا تھا، واقعے میں ملوث کیبن کریو کو ہیڈ آفس طلب کر لیا گیا ہے، ان کے خلاف تادیبی کارروائی عمل میں لائی جا سکتی ہے، جس میں شو کاز یا معطل کیا جانا شامل ہو سکتے ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق مینجر فلائٹ سروسز نے لندن پرواز واقعے کے بعد کیبن کریو کے نام خط لکھ کر کہا ہے کہ کچھ مسافر بورڈنگ کے بعد بلک ہیڈ سیٹوں پر اضافی چارجز دیے بغیر بیٹھ جاتے ہیں، اس کے بعد پی آئی اے کے عملے سے بد تمیزی اور بد کلامی بھی کی جاتی ہے، اس طرح کے واقعات نہ صرف کیبن کریو بلکہ دیگر مسافروں کے لیے بھی زحمت اور فلائٹ میں تاخیر کا باعث بنتے ہیں۔

لاہور سے لندن جانے والی پرواز میں مسافروں کو عملے نے تھپڑ مار دیا

اے آر وائی نیوز کو موصول ہونے والے خط کی کاپی میں کیبن کریو کو ہدایت کی گئی ہے کہ آیندہ اس طرح کے مسافروں سے نرمی سے بات کر کے اضافی چارجز لیے جائیں، فلائٹ سپروائزر اس طرح کے معاملات میں اپنا کردار ادا کریں، بلک ہیڈ سیٹ پر زبردستی اور اضافی چارجز کے بغیر قبضہ کرنے والوں کو اگلے ائیرپورٹ پر متعلقہ پولیس کے حوالے کیا جائے۔

پی آئی اے کی جانب سے جاری کیا گیا لیٹر

خط میں کہا گیا ہے کہ بد تمیزی اور بد کلامی کرنے والے مسافر کی تمام تر تفصیلات نوٹ کر کے اگلے اسٹیشن پر متعلقہ اداروں کو دی جائیں گی، بلک ہیڈ سیٹ پر بغیر اضافی چارجز دیے اور بدتمیزی و بدکلامی کرنے والے مسافروں کو بلیک لسٹ کر دیا جائے گا۔

ادھر ترجمان پی آئی اے نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بلک ہیڈ سیٹیں اضافی چارجز پر دی جاتی ہیں، کیبن کریو مسافروں کو بلک ہیڈ سیٹوں کے چارجز ادا کرنے یا خالی کرانے کو کہتا ہے تو مسافر سیٹیں خالی کرنے سے انکار کر دیتے ہیں اور عملے سے گالم گلوچ بھی کرتے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں