The news is by your side.

Advertisement

غریب ممالک کے لیے اسمارٹ لاک ڈاؤن ہی بہتر آپشن ہے،وزیراعظم

لاہور: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ موجودہ صورت حال میں غریب ممالک کے لیے اسمارٹ لاک ڈاؤن ہی بہتر آپشن ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت اجلاس ہوا جس میں لاہور میں بڑھتے کیسز پر وزیراعظم نے تشویش کا اظہار کیا۔اجلاس فیصلہ کیا گیا کہ لاہور سمیت کسی بھی ضلع میں مکمل لاک ڈاؤن نہیں کیا جائے گا۔

اجلاس کے بعد وزیراعظم عمران خان نے کرونا صورت حال پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں بڑی تیزی سے کرونا وائرس پھیل رہا ہے۔انہوں نے عوام کو بتایا کہ لاک ڈاؤن کا مطلب ساری معیشت کو بند کرنا ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہمارا سنگاپور جیسا چھوٹا ملک ہوتا تو لاک ڈاؤن آسان کام ہوتا،امیر ممالک کے لیے وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے لاک ڈاؤن بہت آسان کام ہے۔

انہوں نے پاکستان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ لاک ڈاؤن سے سارا بوجھ نچلے طبقے پر آتا ہے، ہمارے ملک میں 25 فیصد عوام غربت کی لکیر سے نیچے ہیں،غریب ممالک کے لیے اسمارٹ لاک ڈاؤن ہی بہتر آپشن ہے۔

قوم سے خطاب کے دوران وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عوام ایس او پیز پر عملدرآمد کی ذمہ داری لیں،ایس او پیز پر نہ چلے تو آخرمیں ملک کو بہت بڑا نقصان اٹھانا پڑےگا۔

عمران خان نے کہا اب ہمیں سختی کرنی پڑےگی،عوامی مقام پر کسی کو بھی ماسک کے بغیر جانے نہیں دینا،جہاں ایس او پیز پر عمل نہیں ہوگا وہ علاقہ بند کریں گے۔

وزیراعظم پاکستان کا کہنا تھا لاک ڈاؤن مجبوری میں ختم کیا کیوں کہ لوگوں کے حالات خراب تھے،لاک ڈاؤن میں نرمی سےعوام سمجھے بیماری ختم ہوگئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں