The news is by your side.

Advertisement

پنجاب کے بیسک ہیلتھ یونٹس کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کا فیصلہ

لاہور: صوبہ پنجاب کے 24 سو بیسک ہیلتھ یونٹس کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس سے قبل صوبے کے متعدد سرکاری اسکولوں کو بھی شمسی توانائی پر منتقل کیا جاچکا ہے۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر توانائی ڈاکٹر اختر ملک اور صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کی ملاقات ہوئی، وزیر توانائی کا کہنا تھا کہ پنجاب کے 11 ہزار پرائمری اسکولز کو شمسی توانائی پر منتقل کیا جا چکا ہے۔

وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا تھا کہ بی ایچ یوز کو سولر پینل پر منتقل کرنے کا اقدام قابل تعریف ہے۔

اختر ملک نے کہا کہ مختلف اسپتالوں کو بھی شمسی توانائی پر منتقل کرنے جا رہے ہیں، تمام اداروں کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کا مقصد بجلی کی بچت ہے۔

اس سے قبل صوبہ سندھ میں بھی کرونا ایمرجنسی سینٹرز کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کا منصوبہ بنایا گیا تھا۔

صوبائی وزیر برائے توانائی امتیاز شیخ نے کہا تھا کہ سندھ حکومت نے بجلی کی قلت اور بحران سے نکلنے کے لیے کرونا ایمرجنسی سینٹرز کو سولرائز کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے بتایا تھا کہ پہلے مرحلے میں صوبے کے مختلف اضلاع میں موجود 29 اسپتالوں کو شمسی توانائی پر منتقل کیا جائے گا، جس پر 1.2 ارب روپے لاگت آئے گی، یہ منصوبہ مارچ 2021 تک مکمل ہوجائے گا۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ اگلے مرحلے میں صوبے میں قائم دیگر اسپتالوں کو بھی سولرائز کیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں