منگل, جون 18, 2024
اشتہار

سولر سسٹم : نیٹ میٹرنگ اور گراس میٹرنگ کیا ہے؟ جانیے

اشتہار

حیرت انگیز

ملک بھر میں سولر پینلز کی قیمتوں میں کمی اور بجلی کے بڑھتے ہوئے نرخوں کے باعث عوام کی بڑی تعداد لاکھوں روپے مالیت والے سولر سسٹم کو ترجیح دے رہی ہے تاکہ بجلی کے زائد بلوں سے جان چھوٹ جائے۔

لوگ سوچتے ہیں کہ ایک ہی مرتبہ لاکھوں روپے مالیت کا سولر سسٹم لگا کر اب وہ مفت اور زیادہ بجلی استعمال کرسکیں گے اور بجلی کا بل بھی نہیں آئے گا لیکن شاید اب ایسا ممکن نہ ہو۔

اس حوالے سے یہ خبر سامنے آئی ہے کہ وفاقی حکومت نے سولر ’نیٹ میٹرنگ‘ ختم کرکے ’گراس میٹرنگ‘ شروع کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔

- Advertisement -

گراس میٹرنگ میں یونٹ کے بدلے یونٹ کا فارمولا ختم کرنے کی تجویز زیر غور ہے، اس اقدام سے نیٹ میٹرنگ کا فائدہ اٹھانے والے صارفین کو بھی مہنگی بجلی فراہم کی جائے گی، تاہم اس کا حتمی فیصلہ نہیں ہوسکا ہے۔

metering

نیٹ میٹرنگ کیا ہے؟

نیٹ میٹرنگ ایک بلنگ مکینزم کا نام ہے جس کے ذریعے کے بجلی صارفین کو سولر یا ونڈ پاور کے ذریعے پیدا کردہ بجلی جو وہ گرڈ میں ڈالتے ہیں اس کا کریڈٹ دیا جاتا ہے۔

سولر پینل سسٹم کے تحت بجلی کے میٹر کے ساتھ ایک گرین میٹر نصب کیا جاتا ہے اور ’نیٹ میٹرنگ‘ کے ذریعے جو بجلی کے یونٹ سولر پینل بناتا ہے وہی استعمال کیے جاتے ہیں جبکہ اضافی یونٹ نیشنل گرڈ کو دیے جاتے ہیں۔

مہینے کے آخر میں بجلی کے یونٹ کا حساب ہوتا ہے اگر سولر سسٹم کے بنائے گئے یونٹ سے زیادہ استعمال کیے گئے ہوں تو ان یونٹ کا بل ادا کرنا ہوتا ہے اور اگر کم یونٹ استعمال کیے ہوں اور زیادہ بنائے گئے ہوں تو وہ بجلی نیشنل گرڈ میں جمع کر دیتا ہے اس طرح صارف کا بل منفی آنا شروع ہو جاتا ہے۔

گراس میٹرنگ کیا ہے ؟

اس کے برعکس گراس میٹرنگ اس سے مختلف عمل ہے جس کے تحت سولر صارفین خود کی پیدا کی ہوئی بجلی استعمال نہیں کرسکتے۔

سولر پینلز کے ذریعے پیدا ہونے والی ساری بجلی نیشنل گرڈ میں برآمد کی جاتی ہے جس کے بعد صارف کو وہی بجلی گرڈ سے واپس درآمد کرنا پڑتی ہے۔

حکومت کی جانب سے نیٹ میٹرنگ ختم کرکے گراس میٹرنگ شروع کرنے کا فیصلہ حتمی طور پر تو نہیں کیا گیا مگر اس پر غور کیا جا رہا ہے اور اس کا فیصلہ وفاقی کابینہ کی منظوری کے بعد ہی ہوگا۔

سولر سسٹم

حکومت کی میٹرنگ پالیسی کیا ہے؟

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق حکومت نیٹ میٹرنگ پالیسی کو ختم کے منصوبے پر غور کررہی ہے اور اس کی جگہ گراس میٹرنگ کرنے کے حوالے سے امکانات کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔

گراس میٹرنگ پالیسی کے تحت صارف کے گھر پر اب دو میٹر نصب کیے جائیں گے، سولر پینل کے ذریعے پیدا کی جانے والی بجلی تقریباً نصف قیمت پر نیشنل گرڈ کو دی جائے گی تاہم اس ریٹ کا ابھی تک تعین نہیں ہو سکا ہے۔

اس حوالے سے وفاقی وزیر توانائی اویس لغاری نے سولر نیٹ میٹرنگ پالیسی کو پاور سیکٹر کے لیے ایک مسئلہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت نیٹ میٹرنگ کی پالیسی کو جاری رکھنے کے حق میں ہے تاہم اگر اس پالیسی پر نظر ثانی کی ضرورت پیش آئی تو انتہائی ذمہ داری کے ساتھ اس پر نظر ثانی کرکے اس پالیسی کو تبدیل کیا جائے گا۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں