The news is by your side.

Advertisement

ماں کا اتتقام : خاتون نے اپنے بیٹے کے مبینہ قاتل کو موت کے گھاٹ اتار دیا

سیالکوٹ : ماں نے اپنے بیٹے کے قتل کا بدلہ سات سال بعد مبینہ قاتل کو موت کے گھاٹ اتار لے لیا، عدالت نے سزائے موت کو کالعدم قررار دے کر ملزم کو رہا کردیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق سیالکوٹ کے علاقے بٹر کی رہائشی خاتون پروین اختر نے اپنے 21سالہ بیٹے تسلیم کے قاتل کو سات سال بعد فائرنگ کرکے ہلاک کردیا۔

پولیس کے مطابق سیالکوٹ کی مقامی عدالت نے ملزم نعمان کو سزائے موت سنائی تھی، بعد ازاں اپریل 2019 میں لاہور ہائی کورٹ نے کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے قاتل نعمان کو بے گناہ قرار دے کررہا کردیا تھا، جس کو خاتون کو بہت رنج تھا۔

پولیس کے مطابق پروین اختر نے فائرنگ کرکے نعمان کو موت کے گھاٹ اتار دیا اور فرار ہوگئی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ رہائی کے بعد جب ملزم اپنے گاؤں آیا تو مقتول کی ماں نے موقع پا کر اسے قتل کردیا۔

سیالکوٹ پولیس نے نعمان کے قتل کے الزام میں5 افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے اور ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں