جمعہ, جولائی 19, 2024
اشتہار

جاسوسی غبارہ تباہ کرکے بتادیا کہ ہم کیا کرسکتے ہیں، جوبائیڈن

اشتہار

حیرت انگیز

واشنگٹن : امریکی صدر جوبائئیڈن نے کہا ہے کہ امریکا کی فضائی حدود کی خلاف کرنے والے جاسوسی غبارے کو گرا کر ہم نے بتا دیا ہے کہ ہم مزید کیا کرسکتے ہیں۔

یہ بات انہوں نے واشنگٹن ڈی سی میں واقع کیمپ ڈیوڈ سے وائٹ ہاوس واپسی پر صحافیوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کہی ان کا کہنا تھا کہ چین سے امریکہ کی جاسوسی ہی کی توقع رکھی جاسکتی ہے۔

ایک سوال کے جواب میں کہ کیا غبارے کا واقعہ امریکہ اور چین تعلقات کو کمزور کرے گا؟ کے جواب میں بائیڈن نے کہا کہ نہیں ہم نے چین پر صرف یہ واضح کیا ہے کہ ہم کیا کچھ کرسکتے ہیں۔

- Advertisement -

وہ ہماری پوزیشن کو سمجھ رہے ہیں ہم بالکل بھی پیش قدمی نہیں کریں گے، ہم نے وہی کیا ہے جو کرنا ضروری تھا، کمزور کرنے یا مضبوط بنانے کی بات نہیں یہ صرف ایک حقیقت ہے”

بائیڈن نے کہا کہ غبارے کو اس وجہ سے نہیں گِرایا گیا کہ رائے عامہ کو پتا چل گیا تھا بلکہ غبارے کے امریکی فضائی حدود میں داخل ہوتے ہی میں نے موزوں وقت پر اور جلد از جلد اسے گرانے کے احکامات جاری کر دئیے تھے۔

اس سوال کے جواب میں امریکہ کے صدر جو بائیڈن نے کہا کہ یہ چین پر اعتماد کا مسئلہ نہیں ہے۔ بلکہ مسئلہ یہ فیصلہ کرنے کاہے کہ ہم کن شعبوں میں چین کے ساتھ مل کر کام کر سکتے ہیں اور کن شعبوں میں ہمیں اس سے اختلاف ہے۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں