The news is by your side.

Advertisement

اعجاز جکھرانی کی گرفتاری کیلئے جانے والی نیب ٹیم پر حملہ ، غفلت برتنے پرایس ایچ او اعجاز کھوسو معطل

جیکب آباد : ایس ایس پی نے اعجاز جکھرانی کی گرفتاری کےلئےجانےوالی نیب ٹیم پرحملے کے وقت غفلت پرایس ایچ او اعجاز کھوسو کومعطل کردیا اور محمد شریف مہر کو اضافی چارج دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق ایس ایس پی نے اعجاز جکھرانی کی گرفتاری کےلئےجانےوالی نیب ٹیم پرحملے کے وقت غفلت پرایس ایچ او اعجاز کھوسو کومعطل کردیا، سی آئی اے انچارج محمد شریف مہر کو اضافی چارج دے دیاگیا ہے۔

ایس ایچ او شریف مہر کا کہنا ہے کہ نیب کا مدعی آئے تو مقدمہ درج کرنے کوتیار ہیں ، 2روزقبل نیب ٹیم پر اعجاز جکھرانی کے گھر پر حملہ ،تشدد اور پتھراؤکیا گیا تھا۔

دوسری جانب نیب نے اعجاز جکھرانی سمیت دیگرافرادکےخلاف مقدمےکیلئےپولیس سےرابطہ کرکے تحریری وقوعہ رپورٹ پولیس کے پاس جمع کرادی ہے ، پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ ایس ایس پی جیکب آباد نےمتن متعلقہ پولیس کےحوالےکردیا، تاحال ایس ایس پی نےایف آئی کیلئےمتعلقہ تھانے کو احکامات  نہیں دیے۔

ذرائع کے مطابق ایس ایس پی نے جواب میں کہا ہے کہ آئی جی سندھ سےاجازت کےبعدمقدمہ درج ہوگا۔

وقوعہ رپورٹ نیب نےانسپکٹرعبدالرزاق سروہی کےنام سےجمع کرائی ہے، رپورٹ کے متن میں کہا ہے کہ ٹیم 28جون کوچوہدری شہزاد کی سربراہی میں اعجاز  جکھرانی کی رہائش گاہ پہنچی، مجیب الرحمان جکھرانی نےکہااعجازجکھرانی گھرمیں ہیں بلا کرلاتا ہوں، اعجازجکھرانی کےفرزندرافع جکھرانی ساتھیوں سمیت بیٹھک پرآئے، رافع جکھرانی نےنیب ٹیم کو یرغمال بنا کرجان سےمارنے کی دھمکیاں دیں۔

رپورٹ کے مطابق رافع جکھرانی نےبیٹھک کےباہر2 ہزارقبیلےکےافراد کو جمع کرکےاعجاز جکھرانی کوفرارکرادیا جبکہ ہجوم کےساتھ ملکرنیب ٹیم پر فائرنگ اور  تشدد کیا،گاڑیوں کےشیشےتوڑے ، نیب ٹیم کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جاتی رہیں، حملے سےنیب ٹیم نےموقع سےبھاگ کراپنی جان بچائی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں