The news is by your side.

Advertisement

کیا آپ دنیا کی سب سے اسٹرانگ کافی پینا چاہیں گے؟

کافی کے شوقین افراد یوں تو ہر وقت کافی پینا چاہتے ہیں تاہم ایک کافی ایسی ہے جسے پینے سے قبل وہ ایک لمحہ ضرور سوچیں گے۔

امریکا سمیت دنیا بھر میں فروخت کی جانے والی ایک کافی ’ڈیتھ وش‘ کو دنیا کی تیز ترین کافی سمجھا جاتا ہے۔ عام کافی کے برعکس اس کافی میں 200 گنا زیادہ کیفین موجود ہوتی ہے۔

یہ کافی الگ بیجوں سے تیار کی جاتی ہے جسے روبسٹا کہا جاتا ہے۔ عام طور پر فروخت کی جانے والی کافی، اریبیکا بیجوں سے تیار کی جاتی ہے، اور روبسٹا بیج اریبیکا سے کہیں زیادہ تلخ ذائقے کے حامل ہوتے ہیں۔

اس کافی کے ایک گھونٹ میں 59 ملی گرام کیفین ہوتی ہے جبکہ عام کافی کے ایک گھونٹ میں 12 سے 16 ملی گرام کیفین موجود ہوتی ہے۔

اس کی خصوصیات کو دیکھتے ہوئے اسے نہایت کسیلے ذائقے کی حامل سمجھا جاتا ہے تاہم اس کے برعکس اس کا ذائقہ چیری اور چاکلیٹ کی طرح کا ہوتا ہے۔

اسے بنانے کی بھی ایک خاص ترکیب ہے۔ کافی تیار کرتے ہوئے پانی کے ہر 6 اونس میں ڈھائی چمچے کافی شامل کرنی ہوتی ہے۔

کافی بنانے والی کمپنی کا کہنا ہے کہ نام کی طرح یہ کافی کسی کی موت کا سبب تو نہیں بن سکتی تاہم اسے عام کافی کی طرح دن میں کئی دفعہ نہیں پیا جاسکتا۔

امریکا کی فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن کی ہدایات کے مطابق دن بھر میں اس کافی کی 400 ملی گرام مقدار سے زائد نہ پی جائے، یہ اس کافی کا تقریباً ایک کپ بنتا ہے جس میں 472 ملی گرام کافی ہوتی ہے۔

یہ کافی ان افراد کے لیے مسائل پیدا کرسکتی ہے جو کبھی کبھار کافی پیتے ہیں، ایسے افراد میں اس کافی کا ایک کپ بے چینی، خراش اور دل کی بے قاعدہ دھڑکن کا سبب بن سکتا ہے۔

کیا آپ اس کافی کو پینا چاہیں گے؟

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں