The news is by your side.

Advertisement

میں جوان ہوں،میرے اعضا عطیہ کئے جائیں، طالب علم کا خودکشی سے پہلے آخری پیغام

پشاور : خیبرمیڈیکل کالج پشاور کے طالب علم نے خودکشی سے پہلے آخری پیغام میں کہا میں جوان ہوں، میرے اعضا عطیہ کئے جائیں، تسنیم انجم نے گذشتہ رات ہاسٹل کمرے میں پھندا ڈال کرمبینہ خودکشی کی تھی۔

تفصیلات کے مطابق خیبرمیڈیکل کالج پشاور کے طالب علم تسنیم انجم کی خودکشی کا کیس میں پولیس نے بتایا کہ طالبعلم نےکاغذ پراپنے اعضا عطیہ کرنے کا تحریری پیغام چھوڑا ہے اور کہا میں جوان ہوں،میرے اعضا عطیہ کئے جائیں۔

پولیس نے بتایا کہ لواحقین کےمطابق تسنیم کوکوئی نفسیاتی مسئلہ درپیش نہیں تھا، طالب علم کے لیپ ٹاپ اورموبائل فون کافرانزک معائنہ کیاجارہاہے۔

مزید پڑھیں : پشاور: ذہنی تناؤ کے باعث طالب علم نے خود کشی کرلی

یاد رہے سنیم انجم نے گذشتہ رات ہاسٹل کمرے میں پھندا ڈال کرمبینہ خودکشی کی تھی ، نوجوان فائنل ائیر کا طالب علم تھا جبکہ پولیس کی تحقیقات میں خود کشی کی وجہ ذہنی دباؤ ظاہر کی گئی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں