The news is by your side.

Advertisement

سکھرمیں پولیس سب انسپکٹر کا رکشہ ڈرائیور پر بہیمانہ تشدد

سکھر: سندھ کے شہر سکھر میں گاڑی کے قریب سے رکشہ کراس کرنے پر پولیس سب انسپکٹر نے رکشہ ڈرائیور کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق سکھر کے جیل موڑ کے علاقے میں گاڑی قریب سے سادہ لباس میں ملبوس پولیس سب انسپکٹر آپے سے باہر ہوگیا اور غریب رکشہ ڈرائیور کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا، ایس ایس پی سکھر نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے سب انسپکٹر کی گرفتاری کا حکم دے دیا۔

ذرائع کے مطابق سب انسپکٹر نے رکشے میں موجود خواتین کا بھی لحاظ نہ کیا اور رکشہ ڈرائیور کو گھسیٹ کے رکشے سے اتار کا تشدد کا نشانہ بناتا رہا اور مغلظات بکتا رہا۔

پولیس عملدار کے تشدد پر رکشہ ڈرائیور نے ہاتھ جوڑ کر معافیاں مانگیں مگر اسے رحم نہ آیا، واقعے کے دوران ٹریفک بھی معطل ہوگئی اور لوگوں کا ہجوم لگ گیا۔

اے آر وائی نیوز پر خبر نشر ہونے پر ایس ایس پی سکھر نے واقعے کا نوٹس لے لیا، ایس ایس پی نے بتایا کہ پولیس عملدار کو گرفتار کرنے کا حکم دیا ہے اور سب انسپکٹر کو معطل کرکے مزید کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل لاڑکانہ میں اسپتال کے باہر معصوم بچے کو گود میں اٹھائے باپ پر پولیس اہلکار نے تشدد کیا تھا، واقعے کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد اہلکار کو معطل کردیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں